جبڑوں میں درد کی 5 وجوہات جوآپ کو اور بھی بہت سی تکالیف میں مبتلا کرسکتیں ہیں

Reading Time: 4 minutes

جسم کے کسی بھی حصے میں درد انسان کو تکلیف میں مبتلا کردیتا ہے۔دانت کے درد کی طرح جبڑوں کا دردبھی تکلیف دہ ہوتا ہے۔جیسے گردن اور کندھے درد کی وجہ سے آپ سر کےدرد میں مبتلا ہوسکتے ہیں ایسےہی آپ دانت کےدردکی وجہ اس درد میں مبتلا ہوسکتے ہیں۔جبڑوں میں درد کی وجہ سے ہم بولنےاور منہ کھولنے سے بھی قاصر ہوتے ہیں۔

جب یہ درد شدت اختیار کرتا ہے تو آپ ہنسنے حتی کہ آپ کچھ کھانے پینے سے بھی قاصر ہوتے ہیں۔دانت اور جبڑے ہمارے منہ کا حصہ ہیں۔دانتوں اور جبڑوں کے بغیر ہم کھانا بھی نہیں چبا سکتے۔ہمارے منہ کا یہ حصہ بہت اہم کردار سرانجام دیتا ہے۔اگرآپ کے جبڑوں میں مسلسل درد رہتا ہے اور اس کی کیا وجوہات ہوسکتیں ہیں۔اگرآپ جاننا چاہتے ہیں تو یہ بلاگ لازمی پڑھیں۔

جبڑوں میں درد کی وجوہات-

جبڑوں میں درد کی کیا وجوہات ہوسکتیں ہیں،وہ مندرجہ ذیل ہیں؛

ٹیمپورومینڈیبلر-

306841309

اسے ٹی۔ایم۔جے بھی کہاجاتا ہے۔یہ جبڑوں میں درد کی سب سے عام وجہ ہے۔ٹی۔ایم۔جےوہ جوڑ ہوتے ہیں جو ہمارے منہ کو کھولنے اور بند کرنے میں مدد کرتے ہیں۔ٹی۔ایم۔جے کئی وجوہات کی بنا پر ہوتا ہے۔ جیسے

جبڑے کے جوڑمیں چوٹ

یا جبڑے کی نقل وحرکت کو کنٹرول کرنے والے پٹھوں میں درد

کلسٹرسردرد-

سردرد کی بہت سی اقسام ہیں۔ان میں سے ایک کلسٹر سردرد ہے،یہ درد شدت کا درد ہوتا ہے۔اور یہ  سر سے لے لر آنکھ کے پچھلے حصے میں بھی ہوتا ہے۔سردرد کی وجہ سے بھی جبڑوں میں درد ہوسکتا ہے۔کلسٹر سردرد سردرد کی تکلیف دہ قسم ہے۔

دانت میں درد-

کہتے ہیں دانت اور کان کا درد اتنا تکلیف دہ ہوتا ہے کہ یہ کسی دشمن کو بھی نہ ہو۔دانت کی درد بہت تکلیف دہ ہوتی ہے ۔یہ دردمنہ کے سارے حصے کو لپیٹ میں لے لیتی ہے۔ہمارے جبڑوں میں درد دانت کے درد کی وجہ سے بھی ہوسکتا ہے۔ہم دانت کے درد کو کم کرنے کے لئے اینٹی بائیوٹکس کا استعمال کرتے ہیں۔

دانتوں کےدرد سے کیسےآرام حاصل کریں یہ جاننے کے لئے یہاں کلک کریں۔

دانت پیسنا-

جبڑوں

بہت سے لوگ سوتے ہوئے دانتوں کو پیستے ہیں۔دانت پیسنے کی اس حالت کوپروکسزم کہتےہیں۔یہ ہر عمر کے لوگوں کو متاثر کرسکتا ہے۔دانت پیسنے کی وجہ سے ہمارےدانت بھی خراب ہوسکتے ہیں اور اس کے علاوہ اس سے ہمارے جبڑوں میں بھی درد ہوسکتی ہے۔اکثر دانت پیسنے والے  افراد دانتوں پر بہت دباؤ ڈالتے ہیں جس وجہ سے دانتوں میں تناؤ محسوس ہوتا ہے۔ا س وجہ سے ہمارے جبڑے تکلیف میں رہ سکتے ہیں۔

انفیکشن کی وجہ سے-

ہمارے جسم کے کسی بھی حصے میں انفیکشن ہو وہ نقصان دہ ہوتا ہے۔ہمارے دانتوں میں بھی انفیکشن بہت سی وجوہات کا سبب بنتا ہے۔اگر ہمارے دانت خراب ہوتے ہیں یا ان میں کیڑا لگتا ہے۔دانتوں میں درد کی وجہ سے اعصاب اور پٹھے متاثر ہوتے ہیں۔دانتوں میں انفیکشن جبڑوں کو متاثر کرسکتا ہے۔جس وجہ سے  میں تکلیف ہوتی ہے۔

  دیگر وجوہات-

ہمارے جبڑوں میں درد کی اور کونسی وجوہات ہوسکتیں ہیں؛

ہڈیوں کے مسائل

جبڑوں کی چوٹ

دانت کا انفیکشن

پیروڈینٹل بیماری

جبڑےکےدرد سے کیسے نجات حاصل کریں؟-

ہم   درد سے نجات حاصل کرنے کے لئے مختلیف طریقے اپنا سکتے ہیں؛

آئس پیک کو لگائیں-

294223485

درد سے چھٹکارا حاصل کرنے کے لئے ایک کپڑے میں برف کو لپیٹیںاور 10 منٹ تک اپنے منہ پر لگائیں۔ یہ طریقہ باربار آزمائیں ایسا کرنے سے آپ کے جبڑوں کی درد کو آرام مل سکتا ہے۔اگر آپ درد میں مبتلا ہیں توآپ یہ طریقہ اپنائیں۔

مساج-

آپ کے جس بھی حصے میں درد ہے وہاں مساج کرنے سےآپ کو آرام مل سکتا ہے۔اپنی انگلیوں کی مددسے کان  کے پیچھے سے مساج شروع کریںاور جبڑوں تک لے کرآئیں۔مساج کی مدد سے ہمارے جسم کے کسی بھی حصے کو آرام ملتا ہے۔اس سے پٹھوں میں تناؤ کم ہوتا ہے۔

چیونگم کا کم استعمال-

جو لوگ چیونگم کو زیادہ دیر تک چباتے ہیں ایسا کرنے سے بھی آپ کے جبڑوں میں معمولی درد رہ سکتا ہے اس لئے اس کا کم استعمال کریں۔

سخت کھانے سے پرہیز-

سخت کھانے یعنی ایسے کھانے جب کو چبانے کے لئے زور اور انرجی لگانی پڑے تو ایسا کرنے سے پرہیز کریں۔جیسے چنے اور سخت کھانے سے پرہیز کریں ۔ایسا نہ کرنے سے آپ کے جبڑوں میںتکلیف رہ سکتی ہے۔

کیفین کا استعمال-

بہت سے کھانے اور مشروبات بھی درد کی وجہ بن سکتے ہیں۔کھانے ہمارے پٹھوں میں تناؤ پیدا کرسکتے ہیں ،جیسے چائے کافی کا زیادہ استعمال ہمارے پٹھوں میں تناؤ کو بڑھا سکتے ہیں جس وجہ سے  تکلیف اور بڑھ سکتی ہے۔اس لئے  درد سے نجات حاصل کرنے کے لئے متوازن اور وٹامنز سے بھرپور غذا کا  استعمال کرنا چااہیے۔

دانتوں اور جبڑوں کے مسائل بہت نازک ہوتے ہیں۔ان میں کوتاہی اور لاپرواہی نہیں برتنی چاہیے۔اس لئے فوری طور پر ڈاکٹر سے رابطہ کرنا چاہیے تاکہ تکلیف اور بیماری کا حل نکالا جاسکے۔

اس کے لئے آپ باآسانی گھر بیٹھے مرہم ڈاٹ پی کے ویب سائٹ سے ایک مستند ڈاکٹر کی اپائنمنٹ حاصل کرسکتے ہیں۔اس کے علاوہ آپ گھر بیٹھے وڈیو کنسلٹیشن یا اس نمبر پر 03111222398آن لائن کنسلٹیشن بھی حاصل کرسکتے ہیں۔

The following two tabs change content below.
Avatar
I developed writing as my hobby with the passing years. Now, I am working as a writer and a medical researcher, For me blogging is more of sharing my knowledge with the common audiences