(8 Factors for Premature Birth) وہ 8 عوامل جو قبل از وقت پیدائش کا باعث بن سکتے ہیں۔

Healthy Lifestyle
8 Factors for Premature Birth
Reading Time: 3 minutes

وقت سے پہلے پیدائش بچے اور والدین کے لیے ایک مشکل مرحلہ ثابت ہوتی ہے کیونکہ اس سے نہ صرف بچے کی صحت و زندگی کو لاحق خطرات میں اضافہ ہو جاتا ہے بلکہ اس سے نمٹنے کے لیے خاص احتیاط اور باقاعدہ معلومات حاصل کرنے کی ضرورت پیش آتی ہے۔ جس طرح والدین بچے کے دنیا میں آنے کےاور اس کے بعد کے تمام پہلوؤں پر سوچتے ہیں اسی طرح وقت سے پہلے پیدائش سے بچنا اور اس کے بارے میں مکمل معلومات رکھنا بھی والدین کی اہم ذمہ داری ہے۔

قبل از وقت پیدائش صحت کا ایک بڑا مسئلہ ہے اور اس میں ہونے والے مسلسل اضافے سے محققین پریشان ہیں۔ اس بارے میں تحقیق جاری ہے کہ وہ کون سے عوامل ہیں جو قبل از وقت پیدائش کا باعث بن سکتے ہیں اور کس طرح اس خطرے کا وقت سے پہلے پتہ لگانا ممکن ہے تا کہ قبل از وقت پیدائش کو روکا جا سکے اور اس سے متعلق دیگر مسائل سے بچا جا سکے۔ ذیل میں ایسے ہی کچھ عوامل کا ذکر ہے جن کے موجودگی قبل از وقت پیدائش کے امکانات کو بڑھا دیتی ہے۔ ان خطرات سے آگاہ رہنا اور ایسی صورتحال پیش آنے پر فوری معالج سے رابطہ کرنا ضروری ہے۔ اب آپ کسی بھی پریشانی کی صورت میں مرہم ہیلتھ فورم کا استعمال کرتےہوئے ماہر ڈاکٹروں سے نہ صرف معلومات اور رہنمائی حاصل کر سکتے ہیں بلکہ لاہور، کراچی، اسلام آباد اور ملک کے تمام بڑے شہروں میں موجود بہترین گائناکالوجسٹ سے معائنے کا وقت بھی لے سکتے ہیں۔

قبل از وقت پیدائش کے بہت سے خطرے والے عوامل ایسے ہیں جن سے بچا بھی جا سکتا ہے اور ان کو مکمل طور پر ختم کرنا بھی ممکن ہے۔

ماضی میں قبل از وقت پیدائش سے دوچار ہونا

اگر آپ کے پہلے بچے کی پیدائش قبل از وقت ہوئی تھی تو دوسرے بچوں میں قبل از وقت پیدائش کا امکان آپ کے لیے زیادہ ہے۔ یہ خطرہ اس صورت میں اور بڑھ جاتا ہے جب بچوں کے درمیان وقفہ کم ہو اور آپ پیشگی پیدائش کے دیگر خطرات سے بھی دوچار ہوں۔ ایسی صورتحال میں دوسرے خطرے والے عوامل سے بچنا مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔

جڑواں بچوں کی پیدائش

ایک سے زیادہ بچوں کی پیدائش قبل ازوقت پیدائش کے خطرات کو بڑھا دیتی ہے۔ جڑواں بچوں کی صورت میں ڈاکٹر سے حمل کے دوران صحت کی حفاظت کی خاص تدابیر ضرور معلوم کریں تا کہ آپ اور آپ کا بچہ متوقع خطرات سے محفوظ رہ سکیں۔

Related: 6 Health Issues Women Usually Face After Child Birth

ہائی بلڈ پریشر

اگر آپ ہائی بلڈ پریشر سے متاثر ہیں تو آپ کے لیے قبل از وقت پیدائش کے خطرات سے دوچار ہونے کے امکانات زیادہ ہیں۔ ایسی صورتحال میں آپ کو خاص توجہ اور علاج کی ضرورت ہے تا کہ معالج کی مدد سے آپ کے لیے متوقع پیچیدگیوں کو کم کیا جا سکے۔

ذیابیطس

اگر آپ ذیابیطس قسم اول یا دوم سے متاثر ہیں تو آپ قبل از وقت پیدائش کے خطرات سے زیادہ دوچار ہو سکتے ہیں۔ کیونکہ حمل کے دوران خون میں شکر کی سطح برقرار رکھنا کافی مشکل ثابت ہوتا ہے اس لیے خون میں شوگر کی بے قاعدگیاں بڑھ جاتی ہیں اور قبل از وقت پیدائش کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

سگریٹ نوشی

سگریٹ نوشی صحت کے لیے مضر ہے اور اس کے نقصانات حمل کے دوران ماں اور بچے دونوں کی صحت کو لاحق خطرات میں اضافے کا باعث بنتے ہیں۔ سگریٹ نوشی قبل از وقت پیدائش کا سب سے بڑا سبب ہے۔

شراب نوشی

حمل کے دوران شراب نوشی انتہائی خطرناک ثابت ہو سکتی ہے اور قبل از وقت پیدائش کا باعث بھی بن سکتی ہے۔

ناکافی طبی توجہ

دوران حمل ڈاکٹر سے رجوع نہ کرنا پیچیدگیوں میں اضافے کا سبب بنتا ہے۔ اس لیے شروعات سے ہی قابل بھروسہ معالج سے معائنہ کروانا ضروری گردانا جاتا ہے۔ اس بارے میں بے احتیاطی قبل از وقت پیدائش کا باعث بن سکتی ہے۔

غذائی قلت

ماں بننے والی خواتین کے لیے اپنی غذائی ضروریات کا خیال رکھنا اور بھی اہم ہو جاتا ہے۔ جن خواتین کا وزن وضع کردہ حد سے کم ہوتا ہے ان میں قبل ازوقت پیدائش کا خطرہ صحت مند خواتین کی نسبت زیادہ ہوتا ہے۔

حمل کے دوران خواتین کی صحت کا خیال رکھنا ایک اہم ذمہ داری ہے جس میں ماں کے علاوہ گھر کے دوسرے لوگوں کو بھی حصہ لینا چاہیئے کیونکہ صحت مند ماں ہی صحت مند نسل کی بنیاد ہے۔

Share This:

The following two tabs change content below.
Sehrish
She is pharmacist by profession and has worked with several health care setups.She began her career as health and lifestyle writer.She is adept in writing and editing informative articles for both consumer and scientific audiences,as well as patient education materials.
Sehrish

Latest posts by Sehrish (see all)

Comments are closed.