دانتوں کے دھبے اور پیلا پن صاف کرنے اور سفید بنانے کے آسان طریقے

Reading Time: 3 minutes

دانتوں کی صفائی انسان کی شخصیت کو نکھارنے کےلیۓ بہت ضروری ہوتی ہے ۔ اکثر افراد یہ شکایت کرتے نظر آتے ہیں کہ وہ دن میں دو بار باقاعدگی سے دانت صاف کرتے ہیں۔ اس کے باوجود دانتوں کا پیلا پن ختم نہیں ہوتا ہے

۔اس کے علاوہ بعض اوقات سگریٹ اور پان کے سبب بننے والے ۔دھبے بھی عام ٹوتھ پیسٹ سے صاف نہیں ہوتے ہیں ۔ دانتوں کو سفید اور چمکدار بنانے کے لیۓ ان ٹوٹکوں کا استعمال بہت مفید ثابت ہو سکتا ہے

دانتوں کو چمکدار بنانے کے طریقے

درست ٹوتھ برش اور ٹوتھ پیسٹ کا انتخاب

دانتوں

دانتوں کی صفائی کے لیۓ درست ٹوتھ پیسٹ اور ٹوتھ برش کا استعمال بہت اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔ اگر آپ کے دانتوں پر دھبے موجود ہیں تو آپ دانتوں کی صفائی کے لیۓ ہارڈ ٹوتھ برش کا استعمال کریں۔ اس کے علاوہ وائٹننگ ٹوتھ پیسٹ کا انتخاب بھی ماہرین کے مطابق دانتوں کی قدرتی سفید رنگت کو بحال کرنے میں مفید ثابت ہو سکتا ہے۔  ماہرین اس بات کو بھی تسلیم کرتے ہیں کہ الیکٹرک ٹوتھ برش دانتوں کے اوپر جمے داغ دھبے دور کرنے میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے

اس حوالے سے مذید معلومات کے لیۓ یہاں کلک کریں 

بیکنگ سوڈا اور ہائيڈروجن پر آکسائڈ

بیکنگ سوڈا اور ہائيڈروجن پر آکسائڈ کا پیسٹ دانتوں پر جمے پلاک اور بیکٹیریا کو ختم کرنے کے لیۓ بہت مفید ثابت ہوتا ہے۔ اس کی تیاری کے لیۓ ایک چمچ بیکنگ سوڈا دو چمچ ہائيڈروجن پر آکسائڈ میں مکس کر کے پیسٹ بنا لیں۔  اس پیسٹ سے برش کی مدد سے دانتوں کو صاف کریں۔ اور روزانہ اس پیسٹ سے دانت صاف کریں۔ ایک ہی مہینے میں دانتوں کے دھبے اور پیلا پن نہ صرف دور ہو جاۓ گا۔ بلکہ ان بیکٹیریا کا بھی خاتمہ ہو گا جو کہ منہ کی بدبو کا باعث ہوتے ہیں

سیب کا سرکہ

سیب کے سرکے کو دانتوں کی سفیدی کے لیۓ استعمال کیا جا سکتا ہے۔ لیکن یاد رکھیں کہ اس کی بہت قلیل مقدار کو استعمال کرنا چاہیۓ ہے ۔اس کے استعمال کے لیۓ دو چمچ سرکے کو تقریبا دو کپ پانی میں ملا لیں۔ اور اس محلول کو 30 سیکنڈ تک منہ میں رکھیں۔  اس کے بعد اس کو پھینک دیں اس کے بعد دانتوں کو برش سے اچھی طرح صاف کر لیں۔ ماہرین کے مطابق سیب کا سرکہ رنگ کاٹ کے طور پر کام کرتا ہے۔ اور دانتوں کے پیلے پن کو ختم کر کے ان کو چمکدار بناتا ہے

لیموں ، اورنج اور کیلے کے چھلکے

دانتوں

اگرچہ سائنسی طور پر اس بات کا ثبوت نہیں ملتا ہے کہ پھلوں کے چھلکے دانت سفیدی میں فائدہ مند ثابت ہو سکتے ہیں ۔لیکن یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ ان پھلوں کے چھلکے میں سیٹرک ایسڈ موجود ہوتا ہے۔ اس وجہ سے ان چھلکوں کو جب دانتوں پر رگڑا جاتا ہے۔ تو اس کے اثر سے دانت پر موجود پلاک صاف ہو جاتا ہے۔ اور دانت صاف ہو جاتے ہیں ۔ پھلوں کے چھلکے کو رگڑنے کے بعد منہ کو اچھی طرح کھنگال کر برش سے صاف کر دینا بہت ضروری ہے

چارکول پاوڈر کا استعمال

ماضی میں لوگ پسے ہوۓ کوئلے سے بھی دانت صاف کیا کرتے تھے۔ اور ماہرین کے مطابق چار کول والے ٹوتھ پیسٹ دانتوں کو سفید کرنے کے لیۓ بہت مفید ثابت ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ چار کول پاوڈر کو تھوڑے سے پانی میں مکس کر کے کچھ دیر تک دانت پر لگا رہنے دیں۔ اور اس کے بعد برش سے صاف کر کے دھولیں۔ اس سے ان کے اوپر جما ہوا پلاک صاف ہو جاتا ہے

لیکن یاد رکھیں

اگر یہ تمام ٹوٹکے  کامیاب نہ ہو سکیں تو اس صورت میں لازمی طور پر کسی ماہر ڈینٹیسٹ سے رجوع کرنا ضروری ہوتا ہے ۔کیوں کہ ان کی صفائی اور صحت انسانی صحت کے لیۓ بہت ضروری ہوتا ہے۔ اس مقصد کے لیۓ آن لائن مشورےکے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ایپ ڈاون لوڈ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.

Leave a Comment