دل کے دورے سے ایک مہینہ قبل سامنے آنے والی 8 علامات

Reading Time: 5 minutes

دل کا دورہ درحقیقت ایک ایسی حالت ہے جس میں دل سے خون لانے اور لے جانے والی شریانوں میں کسی نہ کسی وجہ سے رکاوٹ ہو جاتی ہے جس کی وجہ سے دل کو کام کرنےمیں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور اس کو دل کے دورے کا نام دیا جاتا ہے جس کی شدت بعض اوقات اتنی زیادہ ہوتی ہے کہ یہ ہارٹ فیل کا بھی خطرہ لاحق ہو سکتا ہے

دل کے دورے سے ایک مہینہ پہلے سامنے آنے والی علامات

دل
Image Credit: clevland clinic

مشہور کہاوت ہے کہ احتیاط علاج سے بہتر ہے تو اسی حوالے سے دل کا دورہ پڑنا بھی کوئی ایسی بیماری نہین ہے جو اچانک حملہ آور ہو بلکہ اس بیماری کی علامات وقت کے ساتھ ساتھ سامنے آتی رہتی ہیں جن کو لوگ لاعلمی کے سبب نظر انداز کر دیتے ہیں جو کہ ایک دن دل کے دورے کی صورت میں سامنے آکر بڑے نقصان سے دوچار کر سکتا ہے

تھکن

دل
Image Credit:lokmat News

اگر آپ تھوڑا سا کام کرنے کےبعد تھکن محسوس کر رہے ہیں اور یہ تھکن عام حالات سے زیادہ ہے۔ اور عام روزمرہ کےکاموں کو کرنے میں ہی آپ بے حال ہونے لگیں یہ تھکن عام طور پر خواتین میں زيادہ دیکھنے میں آتی ہے اور صرف بیڈ کی چادر تبدیل کرنے میں یا نہانے کے بعد وہ شدید تھکن محسوس کرنے لگتی ہیں

اس صورت میں ان کو اس علامت کو معمولی نہیں سمجھنا چاہیے اور اپنے فزیشن سے رجوع کرنا چاہیۓ جو کہ اس کی وجوہات جاننے کے لیۓ ضروری ٹیسٹ کروا سکیں

پیٹ میں درد

دل
Image Credit: Digestive Health.uk

دل کے دورے سے ایک مہینہ قبل سے ہی پچاس فی صد مردوں اور عورتوں کے پیٹ میں درد ہو سکتا ہے ۔ یہ پیٹ کا درد متلی ، اور پیٹ میں گیس کی علامات کو ظاہر کرتا ہے اس کے ساتھ بدہضمی کی شکایت بھی ہو سکتی ہے یہ علامت مستقل طور پر بھی ہو سکتی ہے اور بعض اوقات اس علامت کی شدت میں رات کو سوتے ہوۓ شدت بھی ہو سکتی ہے

بے خوابی یا نیند کا نہ آنا

دل کے دورے سے ایک ماہ قبل ظاہر ہونے والی نشانیوں میں یہ بھی ایک عام نشانی ہے جس کا سامنا 50 فی صد تک افراد کو ہوتا ہے ۔ ان افراد کو رات میں نیند نہین آتی ہے ۔ بے چینی اور گھٹن محسوس ہوتی ہے ۔

ایسے افراد کو سونے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے اس کے ساتھ ساتھ بار بار آنکھ کھلنا یا پھر بے چینی اور سانس لینے میں دشواری کا بھی سامنا کرنا پڑ سکتا ہے

سانس لینے میں دقت کا سامنا

دل
Image Credit:Medical News Today

یہ ایک ایسی علامت ہے جو کہ دل کے دورے سے تقریبا چھ ماہ قبل ہی سے 40 فی صد مردوں اور عورتوں میں ظاہر ہونا شروع ہو جاتی ہے ۔ اس میں سانس کو لینے میں دقت ہوتی ہے۔ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ گھٹن ہو رہی ہے ۔ تھوڑا چلنے سے سانس پھولنے لگتا ہے اور ہاتھ پیر بے جان سے محسوس ہونے لگتے ہیں

بالوں کا تیزی سے گرنا

یہ علامت اگرچہ مردوں اور عورتوں کے لیۓ یکساں ہوتی ہے مگر مردوں میں اس کے اثرات گنج پن کی صورت میں زیادہ واضح ہوتے ہیں ۔ کنگھی کرنے پر بالوں کا گرنا یا نہانے کے بعد یا سو کر اٹھنےکے بعد تکیۓ پر ٹوٹے ہوۓ بالوں کی موجودگی اس بات کی علامت ہوتی ہے کہ بال تیزی سے گر رہے ہیں

دل کی دھڑکن کا بے ترتیب ہونا

دل
Image Credit: Harvard Health

بیٹھے بیٹھے دل کی دھڑکن کا تیز ہو جانا یا پھر اچانک دل کی دھڑکن کا بہت کم ہوجانا بھی دل کے دورے کی قبل از وقت علامتوں میں سے ایک ہے ۔ یہ علامت اس بات کا الارم ہوتی ہے کہ دل کسی مشکل کا شکار ہے

اسی طرح تھوڑا سا چلنے کے بعد یا ہلکی پھلکی ورزش کے بعد دل کی دھڑکن کا تیز ہو جانا اور آرام سے بیٹھنے کے باوجود کافی دیر تک اس کا تیز ہونا ایک اہم علامت ہے اس کے لیۓ فوری طور پر کسی ڈاکٹر سے مشورہ کرنا انسان کو بڑی مشکل سے بچا سکتا ہے

بہت زیادہ پسینہ آنا

زیادہ پسینہ آنا بھی دل کے دورے کی قبل از وقت علامات میں سے ایک علامت ہے ۔ جس کے تحت جسم میں سے اچانک گرم لہریں نکلنا شروع ہوجاتی ہیں ۔ اس کے علاوہ بیٹھے بیٹھے اچانک سر پر ہاتھوں کی ہتھیلیوں پر اور جسم پر پسینہ نمودار ہونا شروع ہو جاتا ہے

سینے میں درد

سینے میں درد جو کہ کندھے اور بازو کی طرف جا رہا ہو یہ بھی دل کے دورے سے قبل نمودار ہونے والی ایک نشانی ہے جس کی شدت مردوں اور عورتوں میں جدا ہو سکتی ہے۔ عام طور پر عورتوں میں یہ علامت مردوں کے مقابلے میں کم شدت کے ساتھ ظاہر ہوتی ہے اورا کثر خواتین کو یہ محسوس بھی نہیں ہوتی ہے

دل کے دورے کا خطرہ کن افراد کو زیادہ ہو سکتا ہے

دل
Image Credit: ColourBox

عام طور پر صحت مند طرز زندگی کو اپنا کر دل کے دورے کے خطرے سے بچا جا سکتا ہے مگر وہ افراد جو کہ چالیس سال سے زیادہ عمر کے ہوں ۔موٹاپے کا شکار ہوں اور ان کو ہائی بلڈ پریشر اور ذیابطیس کی بیماری بھی ہو تو ایسے افراد میں دل کے دورے کا خطرہ زيادہ ہوتا ہے

اس کے ساتھ وہ افراد جن کے خاندان میں دل کے دورے کی ہسٹری موجود ہو وہ بھی اس کے خطرے کا شکار ہو سکتے ہیں

کس ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیۓ

اگر آپ کو ان تمام علامات کا یا ان میں سے کچھ علامات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہوتو حفاظتی اقدامات کے طور پر آپ کو اپنے فزیشن سے رجوع کرنا چاہیۓ جو کہ علامات کی بنیاد پر جانچ اور میڈیکل ٹیسٹ کے ذریعے آپ کی کنڈیشن کو دیکھ کر فیصلہ کرۓ گا

جنرل فزیشن سے آن لائن رابطے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ویب سائٹ وزٹ کریں یا 03111222398 پر رابطہ کریں