مہندی خریدیں ، کیمیکل نہ خریدیں. کیمیکل بھری مہندی کی 4 نشانیاں

Reading Time: 4 minutes

مہندی لگانا عید کا موقع پر ایک ایسا رواج ہے جس کی ابتدا کب سے ہوئي یہ تو ہم نہیں جانتے لیکن اس کے بغیر عید کا تصور محال ہے  ۔ اگرچہ گزشتہ دو سالوں سے کرونا وائرس کی وبائي صورتحال کے سبب عید کی تیاریاں کافی حد تک مانند پڑ چکی ہیں اس کے باوجود آج بھی گھر کی بچیاں اور خواتین چوڑیوں اور مہندی کے بغیر عید کرنے کو تیارنہیں ہوتی ہیں ۔

اس موقع پر ہاتھوں پر کون مہندی سے دلفریب ڈيزائن بناۓ جاتے ہیں ۔مگر اس حوالے سے گزشتہ کچھ سالوں سے مہندی میں جلدی اور تیز رنگ کے لیۓ مختلف کیمیکل کا استعمال کیا جاتا ہے جو جلد کے پر انفیکشن کا باعث بن جاتے ہیں

اصل مہندی کی کیا نشانی ہے

مہندی
Image Credit: You tube.com

مہندی درحقیقت ایک پودے کے  پتوں کو پیس کر بنایا جانے والا پیسٹ یا پاوڈر کو کہتے ہیں ۔ جس کو پانی میں گھول کر کچھ دیر تک جلد پر لگانے سے جلد پر ایک خوبصورت سرخ رنگ نمودار ہوتا ہے ۔ جو کہ کم از کم دو ہفتوں تک رہتا ہے ۔ اس رنگ کے ساتھ ایک مسحورکن خوشبو بھی اس رنگ کے ساتھ ہوتی ہے جو کہ رنگ کے ساتھ ہی رہتی ہے ۔

یہ ہر طرح کے مضر اثرات سے پاک ہوتا ہے ۔ بلکہ اس کے استعمال کے کئی فوائد ضرور ہوتے ہیں اس کے علاوہ مہندی کے رنگ کو بڑھانے کے لیۓ اس کے اندر مختلف اشیا جیسے کافی یا چاۓ کی پتی وغیرہ کا استعمال کیا جا سکتا ہے جس سے بغیر کسی مضر اثر کے اس کے رنگ کو بہتر بنایا جا سکتا ہے

نقلی مہندی سے کیا مراد ہے

مہندی
Image Credit: Face book

مارکیٹ میں اس وقت مہندی کے نام پر کون مہندیاں جو فروخت کی جا رہی ہیں ان کے حوالے سے یہ یہ کہا جا سکتا ہے کہ ان میں اصل مہندی کے علاوہ سب کچھ موجود ہے ۔

تیز رنگ اور جلد رنگ کے حصول کے لیۓ لوگوں نے اصل مہندی کے بجاۓ مختلف کیمیکل کو ملا کر مہندی کا نام دے دیا ہے ۔

جو کہ لگنے کے بعد فوری طور پر تیز رنگ تو لے آئيں گے مگر جیسے جیسے ان کا رنگ اترتا جاتا ہے اس کے ساتھ ساتھ کھال بھی اترتی جاتی ہے

معروف ماہر جلد کے مطابق کیمیکل سے بھر پور اس مصنوعی مہندی سے جلد پر اکثر الرجی شروع ہو جاتی ہے جس سے جلد پر چھالے بنتے ہیں ۔ یا پھر ایسے نشان بن جاتے ہیں جو کل جلد کو جھلسا کر رکھ دیتے ہیں

نقلی مہندی میں استعمال کیۓ جانے والے کیمیکل

مہندی
Image Credit: You tube

جیسے کہ پہلے بھی بتایا گیا ہے کہ اس جعلی مہندی میں اصل مہندی ہی نہیں ہوتی باقی کیمیکل ہوتے ہیں ۔ تیز اور جلد رنگ حاصل کرنے کے لیۓ اس میں جو کیمیکل استعمال کیۓ جاتےہیں  ان کے حوالے سے کراچی یونی ورسٹی میں ڈاکٹر نصیر الدین خان ہیڈ آف سینٹرلائزڈ سائنس لیبارٹری نے تقریبا آٹھ سے دس بازار میں موجود نمونوں کے جائزے کے بعد جو اجزا بتاۓ ہیں وہ کچھ اس طرح سے ہیں

گیسولین

کیروسین مائع

پینٹ میں استعمال ہونے والی وارنش

بینزین

پی پی ڈی (بالوں کو ڈائی کرنے والا کیمیکل )

بالوں کے رنگنے والے اس کیمکل کے حوالے سے یہ کہا جاتا ہے کہ اس کو کھوپڑی پر لگانے میں احتیاط کریں مگر اس کو جب نقلی مہندی میں شامل کیا جاتا ہے تو اس سے رنگ تو فوری طور پر اجاتا ہے مگر جلد پر سخت مضر اثرات مرتب کرتا ہے

نیم کے پتوں کا استعمال جلد کے لیۓ کس طرح مفید ہو سکتا ہے جانیں 

نقلی مہندی کی شناخت

ویسے تو نقلی مہندی کی سب سے بڑی نشانی اس کا تیز اور فوری طور پر رنگ دینا ہے ۔ لیکن اس کے لیۓ اس کو جلد پر لگانا پڑتا ہے جو کہ خطرناک ثابت ہو سکتا ہے اس وجہ سے ہم آپ کو ایسی ترکیب بتائيں گے جس کے ذریعے آپ اس مہندی کو فوری طور پر جلد پر لگاۓ بغیر  شناخت کر سکیں گۓ

کون  جس کے ساتھ فوری رنگ کا دعوی ہو اس کو صرف چند لمحوں تک اپنے ناک کے قریب لے کر جائيں اس میں سے اصلی حنا  کی بھینی بھینی خوشبو کے بجاۓ کمیکل کی تیز اور چبھتی ہوئی بو اس بات کی نشانی ہے کہ یہ  جعلی  ہے اس کو خریدنے سےاجتناب برتیں

اگر نقلی مہندی سے الرجک ہو جاۓ تو کیا کیا جاے

مہندی
Image Credit: sarahenna.com

اگر اس کو  لگانے کے بعد جلد پر جلن ہونا شروع ہو جاۓ تو فوری طور پر اس کو دھو لینا چاہیے اور اگر اس کےباوجود بھی جلد پر جلد اور خارش جاری رہے تو ڈاکٹر کو دکھا نا چاہیے

اس کے علاوہ بعض لوگوں کے اندر یہ لگاتے ہی الرجی نہیں ہوتی ہے مگر جیسے جیسے کمیکل جلد کے اندر تک اترتے جاتے ہین تو اس کے سبب کچھ گھنٹوں کے بعد چھالوں کی صورت مین جلد پر ابھرنا شروع ہو جاتے ہیں اس صورت میں بھی فوری طور پر جلد کے ڈاکٹر سے رابطہ کرنا ضروری ہوتا ہے

اس حوالے سے کسی بھی قسم کی پریشانی کی صورت میں ماہر اور مستند ڈاکٹروں سے رابطے کے ليے مرہم ڈاٹ پی کے کی ایپ ڈاون لوڈ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.