(Green Tea, A Friend for Your Health) سبز چائے۔ صحت کی دوست

Healthy Lifestyle
Green Tea, A Friend for Your Health
Reading Time: 2 minutes

گزشتہ چند برسوں میں سبز چائے کے فوائد کے بارے میں آگہی بڑھی ہے اور اب اس کا استعمال خاصا مقبول نظر آتا ہے۔غذائی ماہرین کے مطابق اس کے بہت سے فوائد ہیں۔

۔سبز چائے پینے سے جسم کو پانی کی فراہمی بہتر ہو جاتی ہے۔

۔ اس میں کیلوریز نہیں ہوتی اگر اس میں شکر نہ شامل کی جائے تو یہ وزن گھٹانے کا باعث بن سکتی ہے۔

۔ یہ زودہضم ہے ۔کھانے سے پہلے اس کا استعمال ہضم و جذب کا نظام بہتر کرتا ہے۔

مانع تکسید ہوتے ہیں اور جسم کو ضرر پہنچانے والے فری ریڈیکلز سے نجات دلاتے ہیں۔ Catechins ۔اس میں شامل

تاثیر میں حیاتین ج اور ھ (وٹامن Catechins۔ ہارورڈ وویمنز ہیلتھ واچ کی رپورٹ کے مطابق سبز چائے میں پائے جانےوالے

سی اور ای) سے زیادہ طاقتور ہوتے ہیں۔

۔ مشاہدے اور تجربات سے ثابت ہوا ہے کہ سبز چائے میں بہت سی بیماریوں سے مقابلہ کرنے کی بھی صلاحیت پائی جاتی ہے۔جن میں جلد،چھاتی اور سینے کے علاوہ بڑی آنت ،غذائی نالی اور مثانے کے سرطان جیسی بیماریاں شامل ہیں۔

green tea benefits

سبز چائے پینے سے قلب اور شریانوں کی تکالیف میں کمی واقع ہو جاتی ہے۔ –

۔ اس سے خون میں مضر صحت کولیسٹرول کی سطح کم ہو جاتی ہے۔

۔ اس میں بلڈ پریشر کم کرنے کی صلاحیت بھی پائی جاتی ہے۔

۔ اس کے استعمال سے رگوں میں سختی اور رکاوٹیں پیدا نہیں ہوتی۔خون کے تھکے نہیں بنتےجو قلب اور فالج کے حملوں سے بچائو میں ممد و معاون ہے۔

Read Also: 9 Super Veggies You Need to Eat More

احتیاطی تدابیر

۔ چوں کہ سبز چائے میں کیفین ہوتی ہے اسلیے ایک سے آٹھ پیالی تک یہ چائے پی جا سکتی ہے۔ مگر روزانہ دس سے زائد کپ سبز چائے پینا مضر صحت ہے کیونکہ اتنی مقدار سے گردوں میں آگزیلیٹ پتھریاں بن سکتی ہیں اور دیگر مسائل بھی پیدا ہو سکتے ہیں۔

۔ روزانہ تین پیالی سبز چائے پییں۔ کیفین سے پاک سبز چائے بھی دستیاب ہے مگر اس قسم کی چائے کے فوائد کم ہوتے ہیں سبز چائے اچھی صحت حاصل کرنے کا ایک آسان اور سستا سا ذریعہ ہے۔ قدرت کے اس تحفے سے فائدہ اٹھائیں اور اس کو پینا معمول بنا لیں۔

 

Share This:

The following two tabs change content below.
Sehrish
She is pharmacist by profession and has worked with several health care setups.She began her career as health and lifestyle writer.She is adept in writing and editing informative articles for both consumer and scientific audiences,as well as patient education materials.

Comments are closed.