سر میں کھجلی کی 5 وجوہات اور علاج

Reading Time: 4 minutes

سر میں کھجلی عام طور پر ان لوگوں کو زیادہ ہوتی ہے جن کے سر پر بال گھنے اور لمبے ہوتے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ عام طور پر اسکول جانے والے بچے اور گھر کی خواتین اکثر و بیشتر سر مین کھجلی کی شکایت کرتی ہوئي نظر آتی ہیں

سر میں  کھجلی کے اسباب

مگر کھجلی کا سبب ہمیشہ سر میں جوؤں کی موجود گی نہیں ہوتی ہے بلکہ اس کے بہت سارے دیگر اسباب بھی ہوتے ہیں جن کے بارے میں جاننا سب کے لیۓ بہت ضروری ہے

خشکی اور سکری

سر میں کھجلی
Image Credit: The Courier

سر میں کھجلی کا سب سے بڑا سبب عام طور پر خشکی یا سکری ہوتی ہے ۔ یہ سر کی جلد کے اوپر بننے والے سفید اور خشک چھلکے ہوتے ہیں جو کہ سر کی جلد پر ابتدا میں کھجلی کا سبب بنتے ہیں اور اگر اس کا علاج نہ کیا جاۓ تو اس کے سبب خشکی والی جگہ پر سرخ رنگ کے دھبے سے بن جاتے ہیں

ماہرین اب تک تحقیق کے باوجود سر میں ہونے والی خشکی یا سکری کا حقیقی سبب جاننے میں ناکام رہے ہیں مگر ان کے اندازے کے مطابق سر کی کھوپڑی پر بعض اوقات ہونے والا فنگس اس کا سبب ہوتے ہیں ۔

اس کے علاوہ اس کے اسباب میں کھوپڑی کی جلد کا حساس ہونا ، موسم کی تبدیلی یا ہارمونل تبدیلی بھی خشکی کا سبب ہو سکتا ہے

علاج

سر میں کھجلی کا سبب اگر خشکی ہوتو اس کے علاج کے لیۓ کسی ماہر جلد کے ڈاکٹر سے رجوع کرنا چاہیے ویسے عام طور پر اس کے اینٹی ڈینڈرف شیمپو کے استعمال سے بھی سر میں کھجلی سے جان چھڑائی جا سکتی ہے

قوت مدافعت کی کمزوری

سر میں کھجلی
Image Credit: Cubahell

بعض اوقات سوریاسس نامی بیماری کے سبب بھی سر میں کھجلی کی شکایت ہو سکتی ہے اس بیماری میں قوت مدافعت کی کمی کے سبب صحت مند سیل تیزی سے ختم ہونے لگتے ہیں ۔جس کی وجہ سے جلد پر کھجلی اور سرخ نشان پڑنے شروع ہو جاتے ہیں

اس بیماری کی دیگر علامات میں جلد پر سرخ نشانات کا پڑ جانا ، سر میں کھجلی ہونا اور جوڑوں میں سوجن اور درد شامل ہیں ۔

علاج

اس بیماری کے علاج کے لیۓ ماہر ڈاکٹر جلد پر لگانے کے لیۓ مرہم دیتے ہیں اس کے ساتھ ساتھ دوائيں بھی دی جاتی ہیں ۔ یہ دونوں چیزیں مل کر مریض کے علاج میں اہم کردار ادا کرتے ہیں

سر کی جوئیں

سر میں کھجلی
Image Credit: Lice Troppers

سر میں  جوؤں کی موجودگی بھی سر میں کھجلی کی ایک بڑی وجہ ہو سکتی ہے جوؤں کی موجودگی کی وجہ سے اور اس کے انڈوں اور بچوں کی وجہ سے اکثر سر میں شدید کھجلی ہوتی ہے

یہ تکلیف عام طور پر 3 سے 13 سال کی عمر تک کے بچوں میں زیادہ دیکھنے میں آتی ہے جس کا سبب ان کا اسکول میں ایک دوسرے کے بہت قریب بیٹھنا ہو سکتا ہے

علاج

اس کے علاج کے لیۓ ایک جانب تو صفائی کا خاص خیال رکھنا ضروری ہے اور اس کے علاوہ ان کیڑوں کو دور بھگانےکے لیۓ کچھ دوائیں بھی دی جا سکتی ہیں

ذہنی دباؤ کے سبب

سر میں کھجلی
Image Credit: Health magazine

انسان جب کسی بھی وجہ سے ذہنی دباؤ کا شکار ہوتا ہے تو اس کا جسم ہسٹامائن نامی ایک کیمیکل کا اخراج کرتا ہے جس کے اخراج کے سبب جسم الرجی کی کیفیت میں مبتلا ہو جاتا ہے

اس وجہ سے جسم کے مختلف حصوں میں سوزش کی شکایت بھی ہو سکتی ہے جو کہ جسم کے مختلف حصوں کے ساتھ ساتھ سر میں کھجلی کا سبب بھی بن سکتے ہیں

علاج

اس سبب ہونے والی کھجلی کو دور کرنے کے لیۓ ڈاکٹر کے مشورے سے اینٹی الرجی گولیاں استعمال کی جا سکتی ہیں

ایٹوپک ڈرماٹیٹس

سر می کھجلی
Image Credit: Eucerin

یہ بیماری ایک قسم کی جلدی بیماری ایگزیما کے سبب ہو سکتی ہے ۔ یہ جلد کی ایک خطرناک بیماری ہے جس کی اصل وجہ اب تک نہیں پتہ جل سکی ہے ۔البتہ ماہرین کے مطابق اس کا سبب ماحول کے سبب ہونے والی الرجی یا پھر وراثتی طور پر ملنے والی جلدی بیماری ہو سکتی ہے ۔اس کے سبب سر کے ساتھ ساتھ ہاتھوں گردن اور سر پر گرے رنگ کے دھبے پڑ سکتے ہیں یا پھر جلد خشک ہو کر سرخ ہو جاتی ہے ۔

علاج

اس کے علاج کے لیۓ معالج ایسے مرہم استعمال کرواتے ہیں جو جلد کی خشکی کو دور کرتے ہیں جس سے سر کی کھجلی میں آرام آ سکتا ہے اس کے علاوہ اس بیماری میں بغیر خوشبو والے موسچرائزر کا استعمال بھی مفید ثابت ہو سکتا ہے

سر میں  کھجلی کے لیۓ ڈاکٹر سے کب رجوع کرنا چاہیے

عام طور پر ہر انسان کو زندگی میں کم از کم ایک بار سر کی کھجلی کا سامنا ضرور کرنا پڑتا ہے جو کہ عام طور پر ایک آدھ ہفتے میں گھریلو ٹریٹمنٹ اور ٹوٹکوں سے ٹھیک بھی ہو جاتی ہے لیکن اگر سر میں کھجلی ایک ہفتے تک لگاتار جاری رہے تو اس حوالے سے ڈاکٹر سے رجوع کر لینا چاہیۓ

سر کی کھجلی کے لیۓ کسی بھی جلد کے ماہر ڈاکٹر سے رجوع کیا جا سکتا ہے ماہر اور مستند ڈاکٹر سے رابطے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ویب سائٹ وزٹ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں