نمک کا زیادہ استعمال کونسے7 مسائل پیدا کرتا ہے

Reading Time: 4 minutes

نمک ہماری زندگی کی بنیادی ضرورت ہے۔یہ جس چیز میں موجود نہ ہو تواس کی کمی کا احساس ضرور ہوتا ہے۔لیکن اس کا ضرورت سے زیادہ استعمال ہمیں بہت سی بیماریوں میں بھی مبتلا کر سکتا ہے۔لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ کسی بھی کھانے میں اگر نمک کا استعمال نہ کیا جائے توکھانے میں کوئی  ذائقہ موجود نہیں ہوتا۔

کسی بھی چیز کی زیادتی بری ثابت ہوتی ہے،آج کل بہت سی بیماریاں عام ہوگئی ہیں کیونکہ لوگ پروسیسڈفوڈ کا استعمال کرناشروع ہوگئے ہیں۔جس میں نمک کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔اس کی وجہ سے انسان کن مسائل میں مبتلا ہوتا ہے اگرآپ جاننا چاہتے ہیں تو یہ بلاگ پڑھئیں۔

نمک کے زیادہ استعمال سے نقصانات-

یہ دو کیمیکلز سے مل کر بنتا ہے جس میں سوڈیم اور کلورائیڈ ہے۔نمک میں سوڈیم کلورائیڈ موجودہوتا ہے۔اس کے زیادہ استعمال سے ہماری صحت پر جو نقصان مرتب ہوتے ہیں وہ مندرجہ ذیل ہیں؛

ہائی بلڈ پریشر-

نمک

یہ مرض انسان کو اندر ہی اندر ختم کردیتاہےاس کے ہماری صحت پر بہت سے نقصانات ہوتے ہیں۔ہائی بلڈ پریشر ہماری آنکھوں کو نقصان دینے کے علاوہ ہمارے گردوں کو بھی خراب کرسکتا ہے۔سوڈیم اور ہائی بلڈ پریشر کا آپس میں تعلق ہے۔نمک میں سوڈیم موجود ہوتا ہے جو بلڈ پریشر کے مریضوں کے لئے خطرناک ہے۔

جو افراد بی پی کے مریض نہیں ہوتے ان میں نمک کے زیادہ استعمال کی وجہ بلڈ پریشر ہائی ہو سکتا ہےاس کے برعکس جو لوگ اس بیماری میں مبتلا ہوتے ہیں ان میں یہ جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔ہائی بلڈ پریشر فالج اور ہارٹ اٹیک کی وجہ بھی بن سکتا ہے۔

پیشاب کا زیادہ آنا-

اگرآپ رات کے وقت اچانک اٹھ کر پیشاب کے لئے جاتے ہیں توآپ کی نیند متاثر ہوسکتی ہے۔وہ لوگ جو نمک کا زیادہ استعمال کرتے ہیں ان کو پیشاب زیادہ آتا ہے۔ایک تحقیق سے ثابت ہواہے کہ نمک کا زیادہ استعمال آپ کی نیند کو بھی متاثر کرسکتا ہے اس کے علاوہ اس کی وجہ سے آپ بار بار پیشاب کرتے ہیں۔

پیاس محسوس ہونا-

زیادہ نمک کا استعمال آپ کوبیشتر وقت پیاس کا احساس دلاتا ہے۔یہ آپ کے جسم میں سیال کےتوازن میں خلل ڈالتا ہے۔اس لئے اس کے اثر کو ضائع کرنے کے لئے زیادہ پانی پینے کی ضرورت ہوتی ہے۔ہم نمک کاتوازن بحال کرنے کے لئے زیادہ پانی کا استعمال کرتے ہیں۔

سوجن کا ہونا-

نمک کے زیادہ استعمال کی وجہ سے جسم کے مختلیف حصوں میں سوزش کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔اس کی وجہ سے ہاتھوں اور انگلیوں پر سوجن ہوسکتی ہے پیروں کے ٹحنوں پر اس کا سامنا ہوسکتا ہے۔اس کے علاوہ اس کے زیادہ استعمال کی وجہ سے آپ کی آنکھیں بھی پھول سکتی ہیں۔ہمیں تمام مسائل سے بچنے کے لئے اس کا استعمال اعتدال کے ساتھ کرنا چاہیے ۔

سردرد-

219863118

اگرآپ کو مستقل سردرد کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے توہوسکتا ہے کہ آپ کے جسم میں پانی کی کمی ہو۔پانی کی کمی اور نمک کے زیادہ استعمال کی وجہ سےکوسردرد رہ سکتا ہے۔اس لئے اپنی غذا میں اس پر کنٹرول رکھیں۔اس غذا کا کم استعمال کریں جس میں نمک کی زیادہ مقدار ہو۔پیکڈ اور پرسیسڈ فوڈ میں نمک کی زیادہ مقدار ہوتی ہے۔

گردوں کے مسائل-

نمک کا زیادہ استعمال گردے کی پتھری کاسبب بن سکتا ہے۔جب ہم اس کا زیادہ استعمال کرتے ہیں تو گردوں کو پیشاب کی مدد سے اس کو خارج کرنے میں محنت کرنا پڑتی ہے۔جس وجہ سے ہم گردوں کے امراض میں مبتلا ہوتے ہیں۔ہمیں اس سے پرہیز کرنا چاہیے تاکہ ہم صحت کو برقرار رکھ سکیں۔صحت مند اور خوشگوار زندگی گزار سکیں۔

دل کا مسئلہ-

249978270

ہم جب متوازن غذا کا استعمال کرتے ہیں تو اپنے دل کی  صحت کو اچھا رکھ سکتے ہیں۔ہائی کولیسٹرول اور بلڈ پریشر ہماری دل کی صحت کو متاثر کرتا ہے۔پھلوں اور سبزیاں ہماری مجموعی صحت کو بہتر بنانے میں بہت اہم کردار ادا کرتے ہیں۔اس لئے روزمرہ زندگی میں نمکین چیزوں کی بجائے ان کا استعمال کرنا چاہیے تاکہ ہم صحت مند رہ سکیں۔

پھلوں اور سبزیوں میں سوڈیم کی کم مقدار موجود ہوتی ہے۔اس لئے نمک کے اثر کو زائل کرنے کے لئے ہمیں پھلوں اور سبزیوں کا زیادہ استعمال کرنا چاہیے۔جو پروسیسڈاور تیار شدہ چیزیں ہیں ان میں وافر مقدار میں سوڈیم موجود ہوتا ہے۔جو تمام بیماریوں کیوجہ بنتا ہے۔اسلئے قدرتی چیزوں کا استعمال زیادہ کریں یہ ہی آپ کے لئے بہتر ہے۔

اگرخدانحوستہ آپ کو کوئی صحت کا مسئلہ ہے تو آپ ایک فون کال کی مدد سے ڈاکٹر کی اپائنمنٹ بک کرواسکتے ہیں اس کے علاوہ آپ اس نمبر پر 03111222398 آن لائن کنسلٹیشن لے سکتے ہیں۔

The following two tabs change content below.
Avatar
I developed writing as my hobby with the passing years. Now, I am working as a writer and a medical researcher, For me blogging is more of sharing my knowledge with the common audiences