ٹھنڈا پانی پینے کے صحت پرمنفی و مثبت اثرات کے بارے میں جانیں

Reading Time: 3 minutes

ٹھنڈا پانی پینے کے عادی افراد سردی گرمی ہر موسم میں ٹھنڈا پانی پینا پسند کرتے ہیں ۔  اور ان کو یہ محسوس ہوتا ہے کہ ٹھنڈے پانی کے بغیر ان کی پیاس بھی نہیں بجھتی ہے یاد رہے کہ ٹھنڈے پانی کو پینے والوں کےلیۓ ماہرین کا یہ کہنا ہے ۔کہ بہت زیادہ ٹھنڈا پانی سراسر نقصان کا باعث ہوتا ہے مگر عام نلکے کے پانی کے مقابلے میں قدرے ٹھنڈا پانی بہت سارے فوائد کا بھی حامل ہوتا ہے

ٹھنڈا پانی پینے کے فوائد

ٹھنڈا پانی

ٹھنڈے پانی کے اہم ترین فوائد کچھ اس طرح ہیں

ٹھنڈے پانی سے چہرے کی جلد چمکدار ہوتی ہے

گرم پانی چہرے کی قدرتی چکنائی کو صاف کر دیتا ہے ۔جس سے چہرے کی جلد خشک ہو جاتی ہے ۔جب کہ ٹھنڈا پانی اس کے بر خلاف عمل کرتا ہے۔ ۔اور چہرے کے کھلے مساموں کو بند کر کے چہرے کی جلدکوچمک دار اور روشن بناتا ہے

بال چمکدار ہوتے ہیں

ٹھنڈے پانی سے نہانے والے اور ٹھنڈا پانی پینے والے افراد کے بالوں کے اوپر جو کیوٹیکل کی تہہ ہوتی ہے۔ وہ محفوظ رہتی ہے اور اس سے بال ۔چمکداراورخوبصورت ہوتے ہیں

قوت مدافعت میں اضافہ کرتا ہے

ماہرین کی تحقیق کے مطابق جو انسان ٹھنڈے پانی سے نہاتے ہیں۔ ان کے عام نزلہ زکام اور بیمار پڑنے کی شرح دوسرے افراد کے مقابلے میں تیس فی صد کم ہوتی ہے۔ جب کہ یہی حساب ٹھنڈے پانی کے پینے والوں کے ساتھ بھی ہوتا ہے۔ اور ان کے بیمار پڑنے کےامکانات میں کمی واقع ہو جاتی ہے

موڈ کو بہتر بناتا ہے

ماہرین کے مطابق آئس کریم کھانے سے دماغ کا ایک حصہ آربیٹو فینٹل ایکٹو ہو جاتا ہے۔ جس سے انسان کے موڈ میں بہتری آتی ہے۔ اور وہ خوشی محسوس کوتا ہے ۔ایسا ہی ٹھنڈا پانی پینے کے سبب بھی ہوتا ہے ۔اور اس کو پینے سے غصہ کم ہوتا ہے اور موڈ بہتر ہوتا ہے

ورزش کے بعد بہترین مشروب ہے

ورزش کے بعد جب کہ انسان کا جسم ورزش کے سبب گرم ہو جاتا ہے ۔ اس کو دوبارہ سے نارمل حالت میں لانے کےلیۓ ٹھنڈے پانی سے شاور لینا یا ٹھنڈا پانی پینا بہت ہی مفید ثابت ہوتا ہے۔ اور اس سے جسم کا درجہ حرارت نارمل ہو جاتا ہے

پانی اور صحت کے حوالے سے مذيد معلومات کے لیۓ یہاں کلک کریں 

ٹھنڈا پانی پینے کے نقصانات

ٹھنڈا پانی

ٹھنڈے پانی کےفائدوں کے ساتھ کچھ نقصان بھی ہیں جو کہ اس طرح سے ہیں

 ٹھنڈا پانی پینے سے ہاضمے کا عمل سست ہوجاتا ہے

ٹھنڈے پانی کے سبب معدے کی دیواریں سکڑ جاتی ہیں۔ اور ان میں سے ہاضمے کے جوس کے افراز میں کمی واقع ہو جاتی ہے۔ جس وجہ سے کھانےکو ہضم ہونے میں دشواری کا سامنا ہوتا ہے

جسم میں موجود چکنائی کا اضافہ کرتا ہے

کھانے کے دوران جب ساتھ میں سخت ٹھنڈا پانی پیا جاتا ہے۔ تو اس وجہ سے کھانے کے اندو موجود چکنائی جم جاتی ہے ۔اور ہضم ہونے کےبجاۓ جسم میں جمع ہو جاتی ہے ۔جو کہ صحت کے لیۓ بھی خطرناک ہوتی ہے اور وزن میں اضافے کا بھی باعث ہوتی ہے

زہریلے مادوں کا جسم میں اضافہ کرتا ہے

انسانی جسم میں مستقل طور پر میٹا بولزم کا عمل جاری رہتا ہے۔ جس کے باعث ایک جانب تو توانائی اور نیۓ خلیات بنتے ہیں اس کے ساتھ ساتھ کچھ فاضل مادے بھی بنتے ہیں۔ جو کہ گردوں کے ذریعے جسم سے باہر خارج کر دیا جاتا ہے ۔لیکن ٹھنڈے پانی کے سبب ان زہریلے مادوں کو جسم سے خارج کرنے میں مشکلات ہوتی ہیں

جسم کے پٹھوں اور جوڑوں میں درد کے باعث ہوتا ہے

ٹھنڈا پانی پینے کے سبب پٹھوں کی اکڑن میں اضافہ ہوتا ہے جس کی وجہ سے ان پٹھوں کو حرکت دیتے ہوۓ درد ہوتا ہے اس کے علاوہ ماہواری کی حالت میں بھی ٹھنڈا پانی درد کا باعث ہو سکتا ہے

جلد بڑھاپے کا باعث ہوتا ہے

چونکہ ٹھنڈا پانی پینے کے سبب گردوں کے افعال متاثر ہوتے ہیں جس کی وجہ سے زہریلے مادے جسم سے خارج نہیں ہو سکتے ہیں اور ان کی موجودگی کے سبب انسان تیزی سے بڑھاپے کی جانب بڑھتا ہے

قبض کا باعث ہو سکتا ہے

اس  پانی کو پینا  ایک جانب تو ہاضمے کے عمل کو سست کرتا ہے اور دوسری جانب اس کے سبب قبض کے مسائل بھی ہو سکتے ہیں

صحت کے حولے سے کسی بھی قسم کے آن لائن مشورے کےلیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ایپ ڈاون لوڈ کریں یا 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.

Leave a Comment