تربوز : افطار میں اس کا کھانا جسم کے کن بڑے مسائل کو حل کر سکتا ہے جانیں

Reading Time: 4 minutes

تربوز ایک ایسا پھل ہے جو کہ گرمی کے موسم میں آتا ہے ۔ رمضان کے گرم ترین روزوں میں تربوز جنت سے اترا ہوا تحفہ محسوس ہوتا ہے ۔ یہ وہ واحد پھل ہے جو ایک جانب تو روزے دار کی پیاس بجھاتا ہے۔ اور دوسری جانب اس کو کھانے سے پیٹ بھی بھر جاتا ہے اور بھاری پن بھی نہیں ہوتا ہے

تربوز کے افطار میں کھانے کی وجوہات

تربوز کو افطار کے دسترخوان پر لازمی شامل کرنا چاہیے ۔اس کی کچھ اہم وجوہات اس طرح سے ہیں

جسم میں پانی کی کمی پورا کرتا ہے

تربوز
Image Credits: Gulf news

دن بھر گرمی کے موسم میں روزہ رکھنے سے جسم میں پانی کی کمی ہو سکتی ہے ۔ افطار کے وقت پیۓ گۓ پانی یا پھر کسی اور مشروب سے اس کمی کو پورا کرنا ممکن نہیں ہوتا ہے ۔ جب کہ افطار کے وقت تربوز کھانا کئی حوالوں سے مفید ہوتا ہے ۔ اس پھل کے اندر نہ صرف 92 فی صد پانی موجود ہوتا ہے ۔

بلکہ تربوز کے اندر موجود پانی میگنیشیم ، کیلشیم ، سوڈیم اور پوٹاشیم جیسے نمکیات سے بھر پور ہوتا ہے ۔ دن بھر کے روزے کی وجہ سے جسم میں ان نمکیات کی کمی ہو جاتی ہے۔ جو کہ صرف پانی یا شربت پی کر پوری نہیں کی جا سکتی ہے ۔

جسم میں پانی اور ان نمکیا ت کی کمی کے سبب سر درد ، تھکن اور موڈ کی خرابی کی شکایت ہو سکتی ہے ۔ جب کہ افطار کے وقت اس کا استعمال ان مسائل کا بھی خاتمہ کر دیتا ہے

غذائيت سے بھر پور

تربوز
Image Credits: Daily Motion

تربوز کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ اگر ایک جانب یہ جسم کے پانی کی کمی کو پورا کرتا ہے۔ تو دوسری جانب یہ غذائیت سے اور طاقت سے بھر پور غذا ہے ۔ تربوز وٹامن اے ، بی اور سی سے بھر پور ہوتا ہے ۔

تربوز کو افطار کے وقت کھانے سے جسم میں موجود ان وٹامن کی دن بھر کی کمی فورا پوری ہو جاتی ہے ۔ اس کے علاوہ اس میں بیٹا کیروٹین اور لائکو پین وافر مقدار میں موجود ہوتا ہے۔ جو جسم میں دن بھر خالی پیٹ پیدا ہونے والے زہریلے اجزا کو خارج کرنے میں مدد دیتا ہے ۔

کم کیلوری کا حامل

اکثر افراد کو رمضان کے میہنے میں یہ شکایت ہوتی ہے ۔کہ اس مہینے میں ان کا وزن کم ہونے کےبجاۓ بڑھنا شروع ہو گیا ہے ۔ اس کی ایک وجہ تو بہت زیادہ تلی ہوئي اشیا استعمال ہے ۔ روزے دار ان اشیا کو جسم کی دن بھر کی کمزوری دور کرنے کے لیۓ استعمال کرتے ہیں۔ جب کہ ان کی ہائی کیلوری ویلیو کے سبب ان کے استعمال سے نہ صرف وزن میں اضافہ ہوتا ہے۔ بلکہ کولیسٹرول بھی بڑھتا ہے اور صحت کو سنگین خطرات لاحق ہو سکتے ہیں۔

جب کہ اس کے مقابلے میں تربوز غذائيت سے بھر پور ہونے کےباوجود کم کیلوری والی غذا ہے ۔ اور ایک پیالہ بھر کر تربوز کھانے سے جسم کو صرف 46 کیلوریز ہی حاصل ہوتی ہیں ۔

تربوز کے حوالے سے یہ بات بھی بہت اہم ہے کہ یہ ایک ایسا پھل ہے۔ جس کو ذیابطیس کے مریض بھی روزہ کھول کر کھا سکتے ہیں۔ اور اس کے اندر موجود مٹھاس کی مقدار بھی ایک پھانک میں صرف نو گرام تک ہوتی ہے ۔جب کہ اس کے مقابلے میں ایک عام کیلے میں بھی 15 گرام تک چینی موجود ہوتی ہے ۔

اس حوالے سے مذید معلومات کے لیۓ یہاں کلک کریں 

لو لگنے سےمحفوظ رکھتا ہے

تربوز میں لائکو پین اور بیٹا کیروٹین موجود ہوتا ہے ۔ اس کی موجودگی کے سبب جو افراد دن بھر میں سحر اور افطار کے وقت میں تربوز کھانے والے افراد کو دن بھر سورج کی نقصان پہنچانے ولی الٹراوائلٹ شعاعوں سے تحفظ مل جاتا ہے۔ اور ان کو لو لگنے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے

دل کے دورے سے محفوظ رکھے

اس پھل میں پوٹاشیم بڑی مقدار میں موجود ہوتا ہے ۔ جس کی وجہ سے یہ جسم کے بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں مدد دیتا ہے۔ جب کہ دوسری جانب ماہرین کا یہ ماننا ہے۔ کہ لائکو پین کی موجودگی کے سبب یہ جسم میں خون کے بہاؤ کو بہتر بناتا ہے ۔

جس کی وجہ سے دل کے دورے کے خطرے میں واضح کمی واقع ہوتی ہے۔ اور یہ افطار کے بعد دوران خون کو بہتر بنا کر جسم کو چاک و چوبند رکھتا ہے ۔ اس کے علاوہ اس میں اینٹی آکسیڈنٹ اور وٹامن سی کی موجود گی کے سبب خون میں بلند کولیسٹرول کی شرح کو کم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوتا ہے

ہاضمے کے عمل کو بہتر بناۓ

عام طور پر اکثر افراد رمضان میں پیٹ درد ، گیس اور قبض کے مسائل سے دو چار ہوتے ہیں ۔ تربوز میں زيادہ مقدار میں پانی جب کہ فائبر بھی موجود ہوتا ہے ۔ یہ دونوں اشیا کی موجودگی ہاضمے کے عمل کو بہتر بناتی ہیں ۔

اس کے استعمال سے قبض کا خاتمہ ہوتا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ معدے میں غذا کے اندر پانی کی شمولیت کے سبب ہاضمے کا عمل تیز بھی ہوتا ہے

رمضان کےروزے ہر صحت مند انسان پر فرض ہیں ۔ اس وجہ سے اس ماہ بابرکت کے فضل و کرم کو سمیٹنے کے لیۓ اپنی صحت کا خیال رکھنا بہت ضروری ہے۔ صحت کے کسی بھی قسم کے مسلے کے لیۓ ماہر ڈاکٹر سے آن لائن رابطے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ایپ ڈاون لوڈ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.