گلے کی سوزش میں کیاکھاناچاہیے؟

Reading Time: 2 minutes

جب بھی سردی کےموسم کاآغازہوتاہےہوائیں خشک ہوتیں ہیں،ساتھ ساتھ سردی کی دستک سےاوربھی بہت سے مسائل کاآغازہوتاہے۔ جیسےجلدی کی خشکی،نزلہ،زکام،کھانسی،گلہ خراب اوربخاروغیرہ۔یہ سب وہ بیماریاں ہیں جو بدلتے موسم کے ساتھ آتی ہیں۔کچھ لوگوں کی صحت پربدلتاموسم بہت جلداثرکرتاہےاوروہ ان مسائل کا شکارہوتے ہیں۔اگر موجودہ صورتحال کودیکھا جائےتویہ علامات کرونا وائرس کی بھی ہیں جس وجہ سے لوگوں کوبےاختیاطی نہیں کرنی چاہیے۔اور فوری طور پرخیال کرنا چاہیے تاکہ سنگین صورتحال سے بچاجاسکے۔خراب گلےکی حالت اایسی ہوتی ہے کہ اس میں ہمیں اپنی خوراک پرتوجہ کرنے کی ضرورت ہوتی ہے تاکہ ہم مزید گلے کی سوزش سے بچ سکیں اورخوراک سےہی اس کا علاج کرسکیں۔ہمیں گلے کی سوزش میں کونسی غذاکااستعمال کرناچاہیے، اس مضمون میں وہ آپ کے لیے لکھی گئی ہیں۔

لیموں کارس اور شہد-

لیموں اور شہدکاپانی آپ کے گلے کی خراش اورسوزش دور کرنے میں بہترین عمل ہے،اس میں اینٹی اکسیڈنٹ خصوصیات پائی جاتیں ہیں جوانفیکش کوختم کرنے میں مدد دیتی ہیں۔اس میں وٹامن سی بھی پایاجاتا ہے جو ہماری جلد کو بھی فائدہ دیتا ہے۔

گاجرکا استعمال –

جب آپ بیمار ہوں توگاجرکااستعمال بہت اچھاہے،کچی گاجر کا استعمال آپ کےگلےکےلئےتکلیف کاباعث بن سکتا ہےاس لئے گلے کی سوزش میں گاجرکوابال کرکھائیں گاجرغذائی اجزاسےبھرپورہوتی ہے،گاجر میں وٹامن اے،وٹامن سی،وٹامن کے،فائبراورپوٹاشیم پایاجاتا ہےجو صحت کے لئے بہت اچھے ہیں۔

کیلاکااستعمال –

کیلانرم غذاہےجوہمارے گلے کے لئےاچھاہےاسےنگلنے میں بھی آسانی ہوگی۔اس میں وٹامن بی6اورپوٹاشیم بھرپورمقدارمیں پایاجاتا ہے جو ہمیں ہماری صحت کے لئےاہم ہےاوریہ سوزش کم کرنے میں بھی مدد دیتا ہے۔

چکن سوپ کااستعمال –

چکن سوپ میں ہلکی سی اینٹی سوزش پائی جاتیں ہیں،یہ گلےکی سوزش کےاثرات کو کم کرتا ہےاوریہ انفیکشن کوبھی ختم کرتا ہےاس کو غذائیت سےبھرپورکرنےکےلئےاس میں سبزیوں کااستعمال کریں۔

دلیا کا استعمال –

دلیاکولیسٹرول کی سطح کوکم کرنے میں مدد فراہم کرتاہےاس میں پروٹین بھی وافر مقدار میں پائی جاتی ہے،یہ بھی نرم غذاہےاورنگلنے میں بھی آسانی ہوتی ہے۔گلےکی سوزش میں اس کااستعمال کرنا چاہیے۔

ہلدی کا استعمال –

ہلدی میں اینٹی سوزش خصوصیات پائی جاتیں ہیں۔اس میں اینٹی اکسیڈنٹ خصوصیات بھی پائی جاتیں ہیں جو جسم سےزہریلے مادے خارج کرنے میں مدد دیتا ہے۔ہم ہلدی کے پانی کےغرارے بھی کرسکتے ہیں اس کے علاوہ کسی کھانے میں اس کا استعمال گلے کی سوزش کم کرنے میں مدد فراہم کر سکتا ہے۔
گلے کی سوزش بعض اوقات زیادہ تکلیف کاباعث بنتی ہےاگر آپ زیادہ درداورتکلیف میں مبتلا ہیں تو ڈاکٹرسے معائنہ کی ضرورت ہےاس کے لئےآپ گھر بیٹھےمرہم۔پی۔کے کی ویب سائٹ سےڈاکٹر کی اپائنمنٹ لے سکتے ہیں اس کے علاوہ آپ وڈیوکال پریااس نمبر پر03111222398آن لائن کنسلٹیشن بھی لے سکتے ہیں۔

The following two tabs change content below.

Leave a Comment