بلڈ پریشر کے کم ہونے کی علامات اور 5 آسان علاج

Reading Time: 4 minutes

بلڈ پریشر سے مراد وہ دباؤ ہے جو کہ دل کی دھڑکن دل کو جسم میں پھیلانے کےلیۓ ڈالتا ہے ۔ بلڈ پریشر کی نارمل ریڈنگ 80/120 ہوتی ہے اس سے زيادہ ریڈنگ کو ہائی بلڈ پریشر اور اس سے کم ریڈنگ کو لو بلڈ پریشر قرار دیا جاتا ہے

عام طور پر ایک بالغ انسان کا بلڈ پریشر اگر 60/90 ہو تواس کو لو بلڈ پریشر یا ہائپو ٹینشن کہا جاتا ہے

لو بلڈ پریشر کی وجوہات

بلڈ پریشر
Image Credit:Andrew Well.MD

عام حالات میں انسان کے بلڈ پریشر میں اس کی سرگرمیوں کے حساب سے اتار چڑھاؤ آتا رہتا ہے مگر یہ وقتی ہوتا ہے اس وجہ سے پریشانی کا سبب نہیں ہوتا ہے ۔ تاہم اگر یہ کمی مستقل بنیادوں پر ہو تو اس کی وجوہات جاننا ضروری ہوتا ہے جو کچھ اس طرح سے ہو سکتی ہیں

حالت حمل : کیوں کہ اس دوران ماں اور بچے دونوں کو خون کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے اس وجہ سے بلڈ پریشر کم ہو سکتا ہے

کسی وجہ سے خون کا ضائع ہو جانا

دل کے افعال میں خرابی

جسم میں غذائیت کی کمی

اینڈوکرائن نظام میں خرابی : ذیابطیس ، ایڈرنل یا تھائي رائڈ میں خرابی

شدید صدمے کی حالت

بعض ادویات کا استعمال

لو بلڈ پریشر کی علامات

بلڈ پریشر
image Credit:Naryana Health

جن لوگوں کا بلڈ پریشر کم ہوتا ہے ان کو اس کی کمی کی وجہ سے ان علامات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے

تھکن

چکر آنا

متلی

جلد کا ڈھیلا پڑ جانا

ڈپریشن

بے ہوشی

دھندلا نظر آنا

بلڈ پریشر کے لو ہونے کی اقسام

بلڈ پریشر
Image Credit:Renal Fellow Network

مختلف مواقعوں کے اعتبار سے بلڈ پریشر کے لو ہونے کو مختلف اقسام میں تقسیم کیا گیا ہے جو کہ اس طرح سے ہو سکتی ہیں

آرتھواسٹیٹک

یہ  وہ قسم ہے جو اچانک بیٹھ کر کھڑے ہونے کی صورت میں ہوتا ہے یہ ہر عمر کے افراد میں ہو سکتا ہے ۔ جب جسم اپنی حالت تبدیل کرتا ہے مثلا بیٹھ کر کھڑے ہونا یا لیٹ کر بیٹھنا ان تمام حالات میں دوران خون  میں ایک دم کمی واقع ہوتی ہے

پوسٹ پرینڈیل

 یہ قسم کھانا کھانے کے فورا بعد ہوتی ہے ۔ یہ عام طور پر بڑی عمر کے افراد میں ہوتا ہے جو پارکنزم کی بیماری میں مبتلا ہوں ایسے افراد میں لو بلڈ پریشر کی یہ قسم دیکھنے میں آتی ہے

نیورلی میڈیٹڈ

لو بی پی  کی یہ قسم عام طور پر بچوں میں ہوتی ہے ۔ یہ قسم کسی نہ کسی قسم کے جزباتی واقعے سے متاثر ہونے کی صورت میں ہو سکتا ہے

شدید نوعیت کا لو بلڈ پریشر

یہعام طور پر اس صورت میں ہوتا ہے جب کسی چوٹ لگنے کی صورت میں یا خون ضائع ہونے کی صورت مین جسم کے مختلف حصوں کو خون کی فراہمی متاثر ہوتی ہے ۔ بی پی  کا اس طرح لو ہونا جان لیوا بھی ثابت ہو سکتا ہے

لو بی پی کا علاج

بلڈ پریشر
Image Credit: Daily Express

اس کا علاج وجوہات کی نوعیت کے اعتبار سے کیا جاسکتا ہے جن میں سب سے پہلے ان وجوہات کا علاج کرنا ضروری ہے جس کے بعد یہ  خود بخود نارمل ہو سکتا ہے

پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال

عام طور پر بی پی  کے لو ہونے کاایک سبب فوڈ پوائزن بھی ہوتا ہے ۔ جس کی وجہ سے دست اور موشن جسم میں نہ صرف پانی اور نمکیات کی کمی کا باعث بن جاتے ہیں بلکہ اس کی وجہ سے بلڈ پریشر بھی کافی کم ہو جاتا ہے

اس صورت میں پانی کا اور نمکیات کا زیادہ استعمال لو بلڈ پریشر کو نارمل کرنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے

اگر آپ کا خون کا پریشر اٹھنے بیٹھنے سے کم ہوتا ہے تو اس کی احتیاطی تدابیر میں اس بات کا خیال رکھنا ضروری ہے کہ اچانک اٹھنے میں احتییاط کی جاۓ اور آہستہ سے جسم کی پوزیشن کا تبدیل کیا جاۓ

جزباتی طور پر خود کو کسی بھی حالات میں سنبھالنا ضروری ہے ایسے مریضوں کو چاہیۓ کہ ذہنی تناؤ کی حالت میں اپنے ذہن کو کسی اور کام میں مصروف کر لیں

کسی بھی حادثے کی صورت میں بلڈ پریشر کے لو ہونے کی صورت میں ڈاکٹر سے رجوع کرنا ضروری ہے ۔ ڈاکٹر اس موقعے پر دوران خون کو برقرار رکھنے کے لیۓ فوری طور پر ڈرپ لگا سکتا ہے

اس کے ساتھ ساتھ خون کی کمی کو پورا کرنے کے لیۓ خون کا انتقال بھی ایسے مریضوں کے بلڈ پریشر کو کنٹرول کرنے میں معاون ثابت ہو سکتا ہے

جن افراد کے ساتھ ایسا  غذائیت کی کمی کی وجہ سے کم ہوتا ہے ان کو اپنے طرز زندگی مین تبدیلی کر کے کھانے پینے کو متوازن کرنا چاہۓ اس کے لیۓ ان کو زيادہ پروٹین اور کاربوہائيڈریٹ والی غذاؤں کا استعمال کرنا چاہیۓ ۔ آئرن سے بھر پور غذائیں بھی ایسے مریضوں کے جسم سے خون کی کمی کو دور کر کے ان کے دوران خون کو نارمل کرنے میں مددگار ثابت ہو سکتی ہیں

ڈاکٹر سے کب رجوع کرنا چاہیے

دوران خون کا مستقل لو رہنا جسم کو کئی پیچیدگیون میں مبتلا کر سکتا ہے اس لیۓ ایسے مریضوں کو چاہیۓ کہ ہفتہ وار اپنے بلڈ پریشر کا چارٹ بنا کر اپنے فزیشن سے رابطہ کرے جو کہ علامات کی بنیاد پر اس کا علاج کرۓ گا

ڈاکٹر سے آن لائن رابطے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ویب سائٹ وزٹ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.