منہ کا ذائقہ خراب ہونا صحت کے کن 6 بڑے مسائل کا سبب ہو سکتا ہے جانیں

Reading Time: 4 minutes

منہ کا ذائقہ اس حوالے سے بہت اہمیت کا حامل ہوتا ہے ۔ کیوں کہ درحقیقت یہ انسان کے جسم کے اندر موجود بہت ساری خرابیوں کو ظاہر کر رہا ہوتا ہے ۔ عام طور پر بخار یا کسی اور بیماری کی صورت میں منہ کا مزہ کڑوا ہو جاتا ہے جو کہ درحقیقت اس بات کا اعلان ہوتا ہے کہ جسم بخار میں مبتلا ہے ۔

منہ کا  ذائقہ اور صحت کی صورتحال

اپنے منہ کے ذائقے میں ہونے والی تبدیلی کو جان کر انسان اپنی صحت کے حوالے سے بہت ساری ایسی باتوں کو بھی جان سکتا ہے جن کے بارے میں جاننے کے لیۓ کسی ماہر ڈاکٹر کے پاس جایا جاتا ہے ایسی ہی کچھ علامات کے بارے میں ہم آپ کو آج بتائيں گے

منہ کے اندر انفیکشن ہو جانا

منہ کا ذائقہ
Image Credit:CDO

یہ عام طور پر چھوٹے بچوں میں ہوتا ہے اس کے علاوہ بڑي عمر کے افراد میں بھی ہو سکتا ہے۔ اس میں منہ کے اندر سفید نشانات یا چھالے سے بن جاتے ہیں جو کہ زبان اور حلق میں دیکھے جا سکتے ہیں ۔ یہ درحقیقت ایک بیکٹیریا کے سبب ہوتے ہیں جو کہ کسی نہ کسی سبب منہ میں داخل ہو جاتے ہیں اور انفیکشن کا سبب بن کر براہ راست انسان کے مدافعتی نظام کو کمزور کرتا ہے ۔ جس کی وجہ سے منہ کا ذائقہ خراب سا محسوس ہوتا ہے

حاملہ ہونے کی صورت میں

متلی اور شدید تھکن محسوس کرنے کے ساتھ ساتھ حاملہ خواتین عام طور پر منہ کے مزے کے خواب ہونے کی بھی شکایت کرتی ہیں اور ان کے منہ کا ذائقہ ایسا ہو جاتا ہے جیسے انہوں نے کسی دھات کو چبایا ہوا ہے ۔

منہ کے اس خراب ذائقے کا سبب درحقیقت جسم میں حمل کے سبب ہونے والی ہارمون کے نظام میں تبدیلی ہوتی ہے ۔ ہارمون کا یہ اتار چڑھاؤ ایک جانب متلی کا سبب بنتا ہے اور جسم کے دوسرے حصوں پر اثر انداز ہوتا ہے وہیں پر یہ منہ کے ذائقے کو بھی خراب کر دیتا ہے

حالت حمل میں کیا کرنا چاہیۓ اور کیا نہیں کرنا چاہیۓ جاننےکے لیۓ یہاں کلک کریں 

زنک کی کمی کے سبب

اگر آپ کی خوراک میں زنک کی مقدارکم ہو گی تو اس صورت میں بھی منہ کا ذائقہ عجیب ہو سکتا ہے ۔ اگرچہ اس کی حقیقی وجہ جاننے کے بارے مین اب تک سائنسدان لا علم ہیں مگر یہ قیاس کیا جا سکتا ہے کہ درحقیقت زنک کی موجودگی گسٹن نامی ایک پروٹین کو بنانےمیں مددگار ہوتا ہے جو کہ زبان پر موجود ٹیسٹ بڈ کو ایکٹو کرتے ہیں ۔ یہی وجہ ہے کہ زنک کی غیر موجودگی ان ٹیسٹ بڈ پر اثر انداز ہو سکتی ہے

نزلہ زکام کے سبب

منہ کا ذائقہ
Image Credit: Depositphotos.com

اگر نزلہ زکام کے ساتھ آپ کے منہ کا ذائقہ کڑوا ہو رہاہے تو یہ ایک نارمل حالت ہے کیوں کہ نزلہ زکام کے سبب ہونے والے انفیکشن کی صورت میں منہ کا کڑوا پن جسم کے مدافعتی نظام کی جانب سے ایک وارننگ سائن کے طور پر پر ہوتا ہے ۔

درحقیقت اس انفیکشن کے سبب جسم میں موجود پروٹین کی شرح متاثر ہوتی ہے جو کہ ٹیسٹ بڈ کو متاثر کرتی ہے جس سے منہ کا ذائقہ کڑوا ہو جاتا ہے جو کہ انفیکشن کے خاتمے کے بعد خود بخود نارمل ہو جاتا ہے

ذیابطیس کے سبب

اگر آپ ذیابطیس کے مرض میں مبتلا ہیں اور آپ کے خون میں شوگر کا لیول کنٹرول نہیں ہے تو اس کا اثر جہاں جسم کے دوسرے حصوں پر پڑتا ہے وہیں اس سے منہ کا ذائقہ بھی متاثر ہوتا ہے اور منہ کے اندر ہر وقت ایک مٹھاس سی گھلی ہوئي محسوس ہوتی ہے اور ہر وقت ایسا محسوس ہوتا ہے جیسے آپ چقندر چبا کر بیٹھے ہوۓ ہیں ۔ تاہم خون میں شوگر لیول کو کنٹرول کر کے اس مسلے کو حل کیا جا سکتا ہے

ذہنی دباؤ کے سبب

منہ کا ذائقہ
Image Credit: Depositphotos.com

زیادہ پریشانی اور ٹینشن کا سامنا کرنے کے سبب منہ سوکھنے کی شکایت ہو سکتی ہے اس کی وجہ یہ ہوتی ہے کہ پریشانی کی صورت میں سلائيوری گلینڈ تھوک یا سلائيوا کم پیدا کرتے ہیں جس کی وجہ سے منہ سوکھنے لگتا ہے

تھوک کا بننا ایک جانب تو ہاضمے کے عمل کے لیۓ بہت ضروری ہوتا ہے دوسرا زبان پر موجود ٹیسٹ بڈ اپنا کام اس کی موجودگی میں ہی کر سکتے ہیں اور تھوک کی کمی کے سبب زبان کے ذائقے میں تبدیلی واقع ہوتی ہے

اس کے علاوہ بعض اوقات منہ کا ذائقہ ہاضمے کی خرابی یا دانتوں اور مسوڑھوں کی خرابی کے باعث بھی ہو سکتا ہے جس کے علاج کے لیۓ علامات کی بنیاد پر ماہر ڈاکٹر سے رجوع کر کے درست کیا جا سکتا ہے

اپنے منہ کا ذائقہ خراب ہونے کو  کو علامات کی بنا پر پہچانا جا سکتا ہے اور اس کے بعد اس کے حوالے سے کسی بھی ماہر اور تجربہ کار ڈاکٹر سے آن لائن رابطے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ایپ ڈاون لوڈ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں