دماغی صلاحیتوں میں با آسانی اضافہ کیجیئے

Reading Time: 4 minutes

آپ کا دماغ کمزور ہو رہا ہے اور آپ اس بات سے بے خبر ہیں۔ کیا آپ جانتے ہیں کہ عمر میں اضافے کے علاوہ بھی بہت سے محرکات ایسے ہیں جو آپ کے دماغ کو کمزور کر سکتے ہیں۔ جیسے کہ نیند کی کمی اور سگریٹ نوشی۔ آپ کا دماغ اسی قدر برھتا اور بہترین کام کرتا ہے کہ جب آپ اس کو استعمال کریں۔ اس لئے مختلف دماغی کھیل اور پزل حل کرنے والے افراد ایسا نہ کرنے والے لوگوں سے زیادہ ذہین ہوتے ہیں۔

اگر آپ اپنی دماغی صلاحیتوں میں اضافہ کرنے کے خواہشمند ہیں تو دماغی مشقت والے کام کرنا اپنا معمول بنا لیجیئے۔ روزانہ کچھ نئے لفظ سیکھیئے اور ان کا استعمال اپنی روزمرہ زندگی میں کرنا شروع کر دیجیئے۔ اس کے علاوہ کوئی نئی زبان سیکھنا اور بولنا بھی دماغ کی صلاحیت میں اضافے کا باعث بنتا ہے۔ اگر آپ یا آپ کا کوئی عزیز کسی دماغی بیماری کا شکار ہیں تو اس سلسلے میں کسی ماہر نیورولوجسٹ سے ضرور رابطہ کریں۔

ذیل میں کچھ ایسی جسمانی سرگرمیاں درج ہیں جن کو معمول بنا لینے سے آپ اپنی دماغی کارکردگی میں اضافہ کر سکتے ہیں۔

دماغ کی ورزش ضروری ہے

دماغ کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ اگر اس کا استعمال نہ کیا جاےت تو یہ کند ہو جاتا ہے۔ سو دماغ کو تیز اور بہترین کارکردگی کا حامل بنانے کے لیے اس کو مشقت طلب کاموں میں لگائیے۔ جیسے کہ

کوئی نئی کتاب پڑھئیے

لیکچر اٹینڈ کیجیئے

ویڈیو گیم کھیلیئے

میوزیئم کا دورہ کیجیئے

کوئی غیر ملکی زبان سیکھیئے

ریڈیو سننا خاص طور پر کسی ایسی زبان میں جو کہ آپ کی مادری زبان نہ ہو بھی دماغ کے لیے ایک اچھا کام ثابت ہوتا ہے۔

نیوروبکس کیجیئے

ایروبکس یعنی کہ ہوازا ورزشوں سے ہم سب ہی واقف ہیں۔ نیوروبکس ایسی ورزشوں کو کہا جاتا ہے کہ جو دماغ کو نئی جہتوں میں سوچنے پر مجبور کریں۔ بچپن میں لفظوں کو الٹا بولنا اور جملے گڈ مڈ کرنا ایک دلچسپ کھیل لگتا ہے اور یہ دماغ کے لیئے فائدہ مندبھی ہے۔ اسی طرح اپنی پانچوں حسیات کا استعمال کرتے ہوئے دماغ کی صلاحیتوں میں اضافہ ممکن ہے۔ آنکھیں بند کر کہ مختلف چیزیں کھائیے اور اچ کو دیکھے بغیر بوجھنے کی کوشش کیجئیے۔ دفتر جاتے ہوئے معمال کے راستے سے ہٹ کر کوئی نیا روٹ اختیار کیجیئے۔ اگر عام طور پر آپ سیدھا ہاتھ استعمال کرتے ہیں تو الٹے ہاتھ سے لکھنے کی کوشش کرنا بھی دماغ کے لیئے فائدہ مند ہے۔

جسمانی ورزشیں بھی فائدہ مند ہیں

ایسی جسمانی ورزشیں جن سے آپ کے دل کی دھڑکن تیز ہو جائے اور سانس بھی پھولنے لگے آپ کے جسم کے ساتھ ساتھ دماغ کے لیئے بھی بہت مفید ہیں۔ سائنسدانوں کاماننا ہے کہ ان ورزشوں سے دماغ کو خون کی ترسیل بڑھ جاتی ہے اور دماغ کے خلیوں کا آپس میں رابطہ بھی بہتر ہو جاتا ہے۔

ایسا کرنے سے آپ اپنی بادداشت اور تخیل کی صلاحیتوں میں اضافہ کر سکتے ہیں۔ اس کے ساتھ جسمانی مشقت سے قوت فیصلہ بھی بہتر ہوتی ہے۔

صحت مند دماغ کے لیئے صحت بخش خوراک

کہا جاتا ہے کہ انسان اپنی خوراک کا آیئنہ ہے۔ یعنی وہ سب چیزیں جو آپ کھاتے ہیں آپ کی شخصیت اور صحت میں ان کو باآسانی دیکھا جا سکتا ہے۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ آپ کا بماغ تادیر صحت مند رہے تو اپنی خوراک میں ایسی چیزوں کا استعمال بڑھا دیں جو دماغ کے لئے فائدہ مند ہیں۔ ان میں مچھلی، خشک میوہ جات کاص طور پر بادام اور اخروٹ، دنگ دار پھلوں اور سبزیوں کا استعمال مفید ہے۔ دماغ کے لیے  بہترین خوراک کے بارے میں جاننے کے لیے ایک اچھے نیوٹریشنسٹ سے بھی مدد لی جا سکتی ہے۔

اس کے علاوہ پینے والے مشروبات میں بھی احتیاط ضروری ہے۔ بہت زیادہ شکر والے مشروبات کا استعمال مناسب  نہیں ہے۔ شراب نوشی بھی دماغ کی صحت کے لیے مضر ہے۔ یوگا ، باغبانی اور ٹینس بھی دماغ کے لئے مفید ہیں۔

Few Most Popular Neurologists:

The following two tabs change content below.
Sehrish
She is pharmacist by profession and has worked with several health care setups.She began her career as health and lifestyle writer.She is adept in writing and editing informative articles for both consumer and scientific audiences,as well as patient education materials.

Leave a Comment