بلڈ پریشر کنٹرول کرنے والے ۴ قدرتی اجزا

Chronic Conditions
blood pressure monitoring
Reading Time: 3 minutes

ترقی یافتہ دور کی مصروف ذندگی کے انسانی صحت پر کئی مضر اثرات وقت کے ساتھ ساتھ سامنے آتے  رہتے ہیں۔ غیر صحت مندانہ طرز ذندگی اور کھانے پینے کی بد پرہیزی بلڈ پریشر۔ شوگر اور دل کی بیماریوں سے متاثر ہونا ایک عام بات بن چکی ہے۔

ان امراض کے علاج کے لیے استعمال ہونے والی ادویات کے بھی کئی ایک مضر اثرات ہیں ۔ بہت سے لوگوں لے لیے ان کا استعمال ایک مجبوری بن چکا ہے۔ لیکن کئی ایسے قدرتی اجزا بھی موجود ہین جن کو غذا میں شامل کرنے سے بلڈ پریشر کو کنٹرول کیا جا سکتا ہے۔ یہ بلڈپریشر کی ادویات کے استعمال میں کمی لانے کا موجب بھی بن سکتے ہیں۔ لیکن کوئی بھی دوا استعمال کرنے یا نہ کرنے کا فیصلہ ہمیشہ اپنے ڈاکٹر کے مشورے سے ہی کریں۔

درج ذیل غذائی اجزا ایسے ہیں جو بلڈ پریشر کو بڑھنے سے روکتے ہیں اور اس میں کمی لانے کا باعث بھی ہیں۔

کیلا

کیلے میں پوٹاشیئم کی وافر مقدار پائی جاتی ہے جو کہ بلڈ پریشر کو کم کرنے میں معاون جز ہے۔ پوٹاشیئم خون میں سے دس فیصد تک سوڈیئم کیمقدار گھٹا دیتا ہے۔ یہ گردوں کے تحفظ میں بھی اہم کردار ادا کرتا یے۔

 گردوں کے مایر امراض سے رابطہ کرنے کے لیے مرہم ویب سائٹ کا استعمال کیجیئے۔ 

blood-pressure

کالی مرچ

کالی مرچ میں قدرت نے کئی فوائد رکھے ہیں۔ اس چھوٹے سے بیج کے استعمال سے آپ کئی فائدے حاصل کر سکتے ہیں۔ اس میں اینٹی آکسیڈنٹ اور اینٹی سیپٹک خصوصیات پائی جاتی ہیں۔ ٓس کے استعمال سے خون کی
شریانیں کھل جاتی ہیں اور بلڈ پریشر کی شدت میں کمی واقع ہقت

پیاز

پیاز میں بہت سے ایسے اجزا موجود ہیں جو صحت کے لیے مفید ہیں۔ اس کی اینٹی آکسیڈنٹ خصوصیات کے باعث یہ بیت سے امراض کے لیے فائدہ مند ہے جیسے کہ پیٹ کے امراض اور خون میں سے ذہریلے مادے خارج کرنے میں بھی پیاز انتہائی زود اثر دوا اور غذا ہے۔

لہسن

لہسن ہر زمانے میں اپنی افادیت کے باعث اہم سمجھا جاتا رہا ہے۔ جدید سائنس بھی اس کے فوائد کی معترف ہے۔ اس کو کولیسٹرول کم کرنے اور بلڈ پریشر کے لیے بھی مفید قرار دیا جاتا ہے۔آپ بھی ان قدرتی اجزا کو اپنائیے اور ان کی مدد سے پریشان کن بیماریوں سے دور رہیے۔ بلڈ پریشر سے متاثرہ افراد سے یہ معلومات 
ضرور شیئر کیجیئے۔

Few Most Popular Cardiologists:

Share This:

The following two tabs change content below.
Sehrish
She is pharmacist by profession and has worked with several health care setups.She began her career as health and lifestyle writer.She is adept in writing and editing informative articles for both consumer and scientific audiences,as well as patient education materials.