بار بار پیشاب آنا یا مثانے کی کمزوری وجوہات و 5 علاج

Reading Time: 4 minutes

مثانے کی کمزوری اکثر بار بار پیشاب کی حاجت کا سبب بن سکتی ہے ۔ جس کی وجہ سے ہر تھوڑی دیر بعد پیشاب آتا ہے اور پیشاب کرنےکےبعد بھی یہ محسوس ہوتا ہے کہ جیسے کہ پیشاب کی حاجت محسوس ہو رہی ہے

اس وقت دنیا کے بہت سارے لوگ اس تکلیف کا شکار ہیں جن میں سےبعض کے اندر اس تکلیف کے سبب بہت سارے نفسیاتی عارضے بھی پیداہو جاتے ہیں ۔ ایسے افراد تقریبات میں جانا ختم کر دیتے ہین اور اگر چلے بھی جائیں تو ان کوپہلا خیال یہی ہوتا ہے کہ باتھ روم یا ٹوائلٹ کہاں ہے اس وجہ سے وہ لوگ تنہا رہنے کو بہتر محسوس کرتے ہیں

مثانے کی کمزوری کی علامات

مٹانے کی کمزوری
Image Credit: Pharmacy Magazine

اگر کبھی کبھی اچانک آپ کو بار بار پیشاب کی ضرورت محسوس ہونے لگے تو اسکا قطعی مطلب یہ نہیں ہے کہ آپ مثانے کی کمزوری کا شکار ہیں بلکہ اس  کی کئی دیگر وجوہات بھی ہو سکتی ہیں مثال کے طور پر کچھ غذائیں یا پھر وزن اٹھانا یا پیشاب روکنے کی کوشش وغیرہ ایسی چیزیں ہیں جس کی وجہ سےبعض اوقات بار بار پیشاب آنا شروع ہو جاتا ہے

مثانے کی کمزوری کی علامات کچھ اس طرح سے ہو سکتی ہیں

اتنی شدت سے پیشاب آنا کہ جس کو روک نہ سکیں

بار بار پیشاب کی حاجت محسوس کرنا

دن میں کم از کم آٹھ بار یا اس سے زیادہ پیشاب آنا

رات میں سوتے ہوۓ بار بار پیشاب کی حاجت کی وجہ سے آنکھ کھلنا

یہ تمام علامات ہر انسان میں مختلف ہو سکتی ہیں کچھ افراد میں یہ ساری علامات ہو سکتی ہیں اور کچھ میں اس میں سے کچھ ہو سکتی ہیں

مثانے کی کمزوری کا علاج

مثانےکی کمزوری کو دور کرنے کے لیۓ کچھ علاج ماہر نیورو لوجسٹ تجویز کرتے ہیں جن سے اس تکلیف میں کافی افاقہ ہو سکتا ہے

پیلوک فلور تھراپی

مٹانےکی کمزوری
Image Credit: Medical News Today

اکثر معالج کچھ ایسی ایکسرسائز تجویز کرتے ہیں جن کی مدد سے نچلا دھڑ یعنی پیلوک کو طاقت ملتی ہے اور اس طاقت کی وجہ سے مثانہ بھی مضبوط ہوتا ہے اور اس کے اندر پیشاب کو کنٹرول کرنے کی طاقت پیدا ہوتی ہے

ادویات کا استعمال

مثانےکی کمزوری کو دور کر نے کے لیۓ ڈاکٹر حضرات کچھ ادویات بھی تجویز کرتے ہیں جن میں ٹولٹیروڈائن شامل ہوتی ہے یہ دوا پیشاب کی حاجت کو کم کرتا ہے اور مثانے کے عضلات کو وہ طاقت فراہم کرتےہیں جس سے بار بار پیشاب کی حاجت کم ہوتی ہے

بوٹوکس

مثانے کی کمزوری
Image CreditLUrogynocological society

بوٹوکس درحقیت ایک اسیا طریقہ علاج ہے جس کے ذریعے کچھ دواؤں کو ایک انجکشن کے ذریعے جسم کے خاص حصے میں انجیکٹ کیا جاتا ہےجس سے اس جگہ کے اعصاب بلاک ہو جاتے ہیں اور بار بار دماغ تک پیغام نہیں پہنچاتے ہیں جس کی وجہ سے بار بار پیشاب کی حاجت محسوس نہیں ہوتی ہے

اعصاب کو محرک کرنے سے

اس طریقہ کار کے مطابق ان نروس کو الیکٹریکل سگنل دیۓ جاتے ہیں جو مثانے تک جاتی ہیں اس کے لیۓ ایک چھوٹی سی تار کمر کے ساتھ منسلک کی جاتی ہے اور الیکٹریکل شاک دیا جاتا ہے

تاہم اب تک یہ طریقہ کار مثانےکی کمزوری میں بہت مفید ثابت نہیں ہو سکا ہے تاہم اس پر ابھی تحقیقات جاری ہیں

سرجری

کچھ ڈاکٹر اس مرض کی شدت کے سبب آپریشن کےذریعے مثانے کے سائز کو بڑھا دیتے ہیں جس سے اس میں پیشاب کو جمع کرنے کی صلاحیت میں اضافہ ہو جاتا ہے اور بار بار پیشاب کرنے کی حاجت میں کمی واقع ہوتی ہے

مثانے کی کمزوری کے اسباب

مٹانے کی کمزوری
Image Credit: Clevland clinic

جسم کے اندر گردے پیشاب کو بناتے ہیں اور اس کےبعد اس کو مثانے یا بلیڈر میں جمع کر دیتے ہیں اس کے بعد پیلوک میں موجود مسلز دماغ کو پیغام بھیجتے ہیں جس سے دماغ پیشاب کو خارج کرنےکا حکم دیتا ہے

جب کہ مثانے کی کمزوری کی صورت میں پیلوک مسلز کے پیغام بھیجنے کی صلاحیت متاثر ہوتی ہے اور دماغ کو بار بار یہ پیغام جاتا ہےکہ پیشاب کی حاجت ہو رہی ہے اس وجہ سے بار بار پیشاب آتا ہے

مثانے کی کمزوری کی وجوہات میں زيادہ پانی پینا ، ایسی ادویات کا استعمال جو کہ زيادہ پیشاب بنانے کا سبب بنتی ہیں ،پیشاب کے راستے میں ہونے والا انفیکشن ، بہت زيادہ کیفین کا استعمال ، مثانے میں پتھری وغیرہ کا ہونا مثانے کی کمزوری کا باعث ہو سکتے ہیں

مردوں اور عورتوں میں مثانے کی کمزوری میں فرق

اگرچہ مثانے کی کمزوری کی علامات دونوں اصناف میں ایک جیسی ہو سکتی ہے تاہم ان کی وجوہات میں فرق ہو سکتا ہے مردوں میں مثانےکی کمزوری کی اہم وجہ پروسٹیٹ گلینڈ کا سائز میں بڑھ جانا ہوتا ہے

جب کہ خواتین میں عام طور پر مینو پاز کے بعد خواتین میں مثانے کی کمزوری واقع ہو سکتی ہے جب کہ اس کے علاوہ یوٹرس میں یا بچہ دانی کی ہونے والے انفیکشن بھی اس کا سبب بن سکتے ہیں

مثانے کی کمزوری کا قدرتی علاج

مثانے کی کمزوری کو قدرتی طور پر دور کرنے کے لیۓ کچھ اشیا کا استعمال مفید ثابت ہو سکتا ہے

میگنیشیم ہائيڈروآکسائڈ  سے بھر پور سپلیمنٹ جن میں وٹامن بھی شامل ہوں استعمال کرنے سے مثانے کی کمزوری کو دور کرنے میں مدد مل سکتی ہے

مثانے والی جگہ پر کسی تیل سے مساج کرنے سے اس کے اعصاب طاقت پکڑتے ہیں اور اس سے بھی مثانے کی کمزوری پر قابو پایا جا سکتا ہے

ان تمام عوامل کے باوجود اگر مثانے کی کمزوری اگر برقرار رہے تو اس صورت میں کسی بھی ماہر نیورولوجسٹ سے مشورہ کرنا ضروری ہوتا ہے ماہر ڈاکٹروں سے آن لائن مشورے کے لیۓ مرہم ڈاٹ پی کے کی ویب سائٹ وزٹ کریں یا پھر 03111222398 پر رابطہ کریں

The following two tabs change content below.
Ambreen Sethi

Ambreen Sethi

Ambreen Sethi is a passionate writer with around four years of experience as a medical researcher. She is a mother of three and loves to read books in her spare time.